Dr Nasira Naseem Gynaecologist

Dr Nasira Naseem Gynaecologist

Comments

https://www.facebook.com/media/set/?vanity=alliedtechnocontrolsystems&set=a.4677097392312016

LED PHOTOTHERAPY LIGHT Model: BL-80S Made in Pakistan
- 6 Time Faster than tubes Phototherapy
- Digital LED Phototherapy Light for Infant Jaundice Better Treatment in less time (10 x 18 inch Light Effective Area)
- Fan less design total noise free
- No Heat exhaust at front side (No Temperature Effect for Infant body)
- Digital Controller with 5 Step Power Selection 2 to 10 mW/cm2 (30 ~ 160 uW/cm2/nm )
Very good condition ❤️❤️❤️❤️💘💘
I am married. After Two year No Childern.Plz guide Any madican.
Thanks
GREETINGS FROM “PRAGVAMSHOO INDIA”
GRÜßE VON ‘PRAGVAMSHOO INDIA’

First and foremost, I would like to thank you for the opportunity given to speak about 'SICHER'

Our premier health special food products GRAZIOSS-SICHER products are manufactured by using all natural ingredients for the health nourishment.(No additives / No added Colours / No preservatives ) and will be useful for Control and Correcting the body from Cancer / Diabetes / Heart Health / For Glooming / Immunity & Body strength.

‘SICHER’ is one of the premiere health product introduced in INDIA, The product is based on Wheat Grass, Grains, Nuts, Fruits, Plants, Leaves and Herbal extracts. We are feeling happy about this new Product and its concept. The product looks soothing.

SICHER rejuvenate your impaired body, it increases positivity, enhances memory and treats insomnia For ‘Sure’.

‘SICHER’ (Safe, Secure, Harmless and Reliable) useful to you for:-
Feel Good
Heart & Muscle Health
Recuperation from Cancer
Diabetic
Neurological use
Detoxification
Digestion
Skin Disorders
Geriatric
This blend is 100% ethical and Natural in all parameters.
We have secured the purity of the ingredients naturally.

Looking forward to hear from you
Shrinivas Purushan
Director
++91 9552272734
[email protected]
(Recognized by- Government of India and Provision Karnataka Government, Dept. Of Biotechnology)

(Made in India, Made for the World)
I have pcos can they be operated?n can I get pregnant
Hi mommy I'm also pregnant I'm 4month but my stomach is still soft and i don't even feel baby movement is possible or not possible
Is it still normal for a 17 yr old girl who has not started her MPs??

Infertility Female & male IUI,ICSI,pregnancy issues,Va**nal discharge,Dysmenorrhea,PCO,Ovarian /ute

Operating as usual

19/01/2023
Photos from Dr Nasira Naseem Gynaecologist's post 17/01/2023

Needful Training of Health care providers of nearby health facilities..
Dr Nasira Naseem
ShamimAkhtarclinic
Clinic#03136260940

16/01/2023
10/01/2023
09/01/2023
08/01/2023
07/01/2023
05/01/2023
04/01/2023
Photos from Dr Nasira Naseem Gynaecologist's post 04/01/2023

Photos from Dr Nasira Naseem Gynaecologist's post

04/01/2023




ڈاکٹر صاحب آپ بار بار بتا رہے ہیں کہ نومولود بچےکو گائےکا دودھ نہ دیں ۔
میں نے کئی ماؤں کو گائے یا بھینس کا دودھ بچوں کو دیتے دیکھاہے جنکے بچے ذیادہ تندرست نظر آتے ھیں ۔ وضاحت فرمایں۔۔۔
#جواب ۔
سب سے پہلی بات یہ کہ گا ئےکا دودھ قدرت نے گا ئے کے بچھڑ ے کے لئے بنا یا ہے ۔ بچھڑے کی غذا کی ضرو ریات انسان کے بچے سےبا لکل مختلف ہیں ۔ گائے کے بچھڑے کا معدہ اور نظام ہضم انسان کے نازک بے بی سے بالکل مختلف ہے ۔
جس طر ح ایک بالغ انسان گا ئے کی غذا ہضم نہں کر سکتا اسی طر ح بے بی کا معدہ بھی بچھڑ ے کا خوراک ہضم نہیں کر سکتا ۔اس لئے ما ں کا دودھ ایک نو مو لود بچےکے لئے بہتر ین غذا ہے ۔
اگر ما ں کا دودھ کسی وجہ سے میسرنہیں ہے تو دوسرے نمبر پر فا رمو لا یا ڈبے کا دودھ /formula milk ہے ۔
اگر چہ ڈبے کا دودھ گا ئے کے دودھ سے ہی بنا یا جاتا ہے مگر اس کو ایک بہت پیچیدہ طر یقہ سےگزار کر ماں کےدودھ کے سا خت کے قریب ترکیا جا تا ہے ۔
؛
»» گا ئے کے دودھ میں ائرن/iron بہت کم مقدار میں ہے اور جس شکل میں ہےا میں بہت کم مقدار میں جذب ہو تا ہے۔
»» گا ئے کے دودھ میں پروٹین/proteins اورمنرل/minerals کی مقدر بہت زیا دہ ہے جوکہ نو مو لود بے بی کے گردوں/kidneys کو نقصان پہنچا سکتا ہے ۔
»» گائےکےدودوھ میں جو lipid کی مختلف شکل موجود ہے ۔وہ انسانی صحت کے لئے مو زوں نہیں ۔
»» اور ایک انتہا ئی اہم چیز گائے کادودھ بہت ابتدائی عمر میں دینے سے کا و ملک الرجی/cow_milk_allergy کا رسک بہت بڑھ جا تا ہے جس سے بے بی کے آنت سے خون بہتا ہےجو بظاہرپاخانے میں نظر نہیں آ تا مگر اگر مائیکروسکوپ/ microscope کے اندر دیکھے تو یہ اوکلٹ بلڈ/occult blood کی صورت میں نظرآتا ہے ۔
اس سے نہ صرف آنت کو نقصان ہوتا ہےبلکہ خون میں موجود آئرن بھی پاخانے کے راستے ضائع ہو جا تا ہے ۔
»»ا گر گائے کا دودھ پینے والا بچہ بظاہرصحت مند نظر آئے تو اس کا مطلب یہ نہیں کہ اس کی ذہنی اور جسمانی صحت بہتر ہے ۔
ہمیں نہیں معلوم اس میں ائرن کی کمی کتنی ہے جو کہ ذہنی صحتmental_health اور IQ کے لئے ضروری ہے ۔
اور اسکا بھی اندازہ لگا نا اسان نہیں کہ بچے کے گر دوں پر کتنا بو جھ ہے -
»» ایک اور چیز کی وضاحت ضروری ہے کہ بچھڑے کیلئے جسامت کاجلدبڑھنا زیا دہ ضروری ہے ۔
اس لئے قدرت نے گائے کے دودھ میں پرو ٹین ا ور منرل کی مقدار انسانی حد سے زیا دہ رکھی ہے ۔
انسان کے لئے پہلی تر جیح دما غ اور ذہنی صحت ہے اس لئے ماں کے دودھ میں سینکڑوں ایسے اجزا ہیں جو دماغ کے نشو نما میں مددکرتے ہیں۔۔
ایک سال کی عمر میں بچے کا ہا ضمہ اورگردے/kidneys اتنے میچو ر ہو تے ہیں کہ بے بی ارام سے گا ئے کا دودھ ہضم کرسکتا ہے ۔
Copied




02/01/2023
31/12/2022
30/12/2022




پاکستانی ماوں کا پسندیدہ ترین مشغلہ: بچوں کا سر بنانا

جیسے ہی آپ ماں بنیں گی آپکی امی، ساس، خالہ، پھوپھو، تائی، چاچی اور ہر رشتہ دار خاتون آپکو ایک مشورہ ضرور دیگی اور وہ ہے بچے کا سر کیسے بنایا جائے۔
ان مشوروں میں بچے کے سر کو آگے پیچھے سے دبانا، بچے کے سر کے نیچے گتا، لکڑی، پلیٹ یا کوئی سخت چیز رکھنا۔ گردن کو اسطرح رکھنا کہ سر بالکل سیدھا رہے، خاص تکیوں کا استعمال، سر پر اینٹ رکھنا تک شامل ہیں۔
جو عورت سر بنانے میں بہت expert مانی جائے گی اور اپنی کامیابی کے قصے سناتی نظر آئیگی اسکے بچے(جو کہ اب بڑا ہو چکا ہوگا) کا سر ایک بار غور سے دیکھیں۔ اسکا سر پیچھے سے سیدھا ہو گا جیسا اس تصویر میں left میں دکھایا گیا ہے جو کہ بالکل بھی نارمل نہیں ہے۔
سر کا اس طرح سیدھا ہوجانا Flat head syndrome کہلاتا ہے۔ جو کہ پاکستانی ماوں کے مطابق ایک achievement ہے۔ دراصل ایک abnormal کنڈیشن ہے۔ سر کی ایک سطح کو بالکل سیدھا کر دینا اور ہڈی کی ساخت کو تبدیل کر دینا سراسر غلط ہے۔ flat head syndrome کے بچوں میں

● باریکی کے کام (یعنی fine motor skills)
●زبان کا استعمال( یعنی Language development)
● فہم و فراست ( یعنی cognitive skills)
● جذباتیات (یعنی emotional intelligence)
میں کمی آسکتی ہے۔
سب میں نہیں ہوتا لیکن ایسا ہونا ممکن ہے اور ایسے بہت سے کیسز رپورٹ بھی ہوئے ہیں۔

تو پھر سر بنانے کیلئے کیا کرنا چاہیے؟؟

تو اسکا جواب ہے کہ بچے کو سکون سے جینے دیں۔ کچھ بھی مت کریں۔ بچے کو کبھی کروٹ اور کبھی سیدھا سلائیں سر کو ایک جگہ پہ fix نہ رکھیں تاکہ وہ کسی بھی جگہ سے flat نہ ہو جائے اور سر کی ہڈی کو اپنی اصلی شکل اختیار کرنے دیں جو کہ گول ہے۔
اور سر بنانے کا مشورہ دینے والوں کا مشورہ ایک کان سے سن کر دوسرے کان سے نکال دیں۔
Copied

Photos from Dr Nasira Naseem Gynaecologist's post 29/12/2022

Photos from Dr Nasira Naseem Gynaecologist's post

27/12/2022




خواتین کی صحت اور اینڈومیٹریوسز۔۔۔۔
Endometriosis and Woman Health....

'میرے درد کو سب لوگ تماشے کا نام دیتے تھے'

کیا آپ کو بھی ماہواری شدید درد کے ساتھ ہوتی ہے؟
میرا آج کا موضوع نوجوان لڑکیوں کے لیے ۔۔۔۔

ماہواری کے دنوں میں مجھے اتنی تکلیف ہوتی تھی کہ میں دعا کرتی تھی کہ میں مر جاؤں اور میں اپنے اسی درد اور تکلیف کو کم کرنے کے لیے اتنی بے تاب تھی کہ میں اپنے آپ کو زخمی بھی کرتی تھی۔'

یہ کیفیت بیان کرتے ہوئے فاطمہ کی آواز لڑکھڑا گئی۔

30سالہ فاطمہ کے مطابق جب وہ بالغ ہوئیں تو انھیں کسی نے نہیں بتایا تھا کہ جب لڑکی جوان ہوتی ہے تو اس کے جسم میں کس قسم کی تبدیلیاں آتی ہیں۔

اس وجہ سے انھیں ماہواری اور اس سے جڑے معاملات کے بارے میں کوئی خاص آگاہی نہیں تھی۔

ملتان کی رہائشی فاطمہ کئی سال قبل پڑھائی کے لیے بہاولپور گیی ۔ اور اسی دوران انھیں ماہواری شروع ہوئی۔

لیکن ان کی ماہواری باقی خواتین سے خاصی مختلف تھی۔ فاطمہ کے مطابق ماہواری کے پہلے تین دن ان کے لیے اذیت ناک ہوتے تھے۔

فاطمہ کہتی ہیں کہ ان کے ہاسٹل کی وارڈن اور دیگر عملے کو بھی معلوم ہوتا کہ ایسی صورت حال میں انھیں کون سی دوائی دینی ہے اور کون سا انجکشن لگوانا ہے۔۔۔۔

اپنی تکلیف کا تذکرہ کرتے ہوئے فاطمہ نے بتایا کہ ماہواری میں خون کا بہاؤ شروع ہوتے ہی ان کے جسم کے نچلے حصوں اور ٹانگوں میں شدید درد ہوتا تھا اور انھیں ایسا لگتا تھا کہ کوئی خنجر سے جسم کے اندرونی اعضا کاٹ رہا ہے۔۔۔

میرے اردگرد کے تمام لوگ فوراً جان جاتے تھے کہ فاطمہ کے ماہواری کے دن شروع ہو گئے ہیں کیونکہ میں درد کی شدت سے چیخیں مار رہی ہوتی تھی اور اپنے آپ کو تکلیف پہنچاتی تھی۔ کئی مرتبہ میں بے ہوش بھی ہو جاتی تھی۔ لوگوں کو لگتا تھا کہ میں تماشہ کر رہی ہوں۔ میرے اردگرد کے لوگ کہتے تھے تم کوئی انوکھی ہو جو اس طرح کے تماشے لگاتی ہو۔'

لیکن فاطمہ ایسی اکیلی خاتون نہیں ہیں جو ماہواری کے دنوں میں اس قسم کے پریشان کن درد کا شکار ہوتی ہیں۔

اس درد کا سبب کچھ خواتین میں پائی جانے والی مخصوص بیماری کے باعث ہوتا ہے جسے 'اینڈومیٹریوسز' کہتے ہیں۔۔۔۔

اینڈومیٹریوسز کیا ہے؟
What is Endometriosis?

اینڈومیٹریوسز خواتین میں پائی جانے والی ایک ایسی بیماری ہے جس میں عورت کی بچہ دانی کے اندر کے ٹشو، جنھیں اینڈومیٹریم کہا جاتا ہے، وہ بچہ دانی سے باہر بن جاتے ہیں۔

اینڈومیٹریم ٹشوز کا یہ بگاڑ ماہواری کے دنوں میں متاثرہ خواتین میں زیادہ تکلیف کا سبب بنتا ہے اور اس بیماری میں مبتلا کئی خواتین میں بانجھ پن کا باعث بھی بن سکتا ہے۔۔۔۔
ہمارے یہاں اکثر لڑکیاں اس بیماری کا شکار ہوتی ہیں لیکن وہ لاعلم ہوتی ہیں کہ انھیں کیا مسئلہ ہے۔

'عموماً جب لڑکیاں جوان ہوتی ہیں اور ان کی ماہواری شروع ہوتی ہے تو ماؤں یا اردگرد کی خواتین کی جانب سے یہ کہہ دیا جاتا ہے کہ کوئی بات نہیں، ان دنوں میں درد ہوتا ہے۔ مگر ہمارے معاشرے میں اس بیماری کے بارے میں خواتین میں زیادہ آگاہی نہیں ہے اور وہ ہر لڑکی کے ماہواری کے دنوں کو ایک جیسا ہی سمجھتے ہیں۔'

یہ بھی یاد رکھنا اور سمجھنا بہت ضروری ہے کہ ماہواری میں ہونے والا ہر درد اینڈومیٹریوسز نہیں ہوتا ہے اور اس کے لیے ضروری ہے کہ بیماری کی درست تشخیص کی جائے۔۔۔

جب ہمارے پاس کوئی مریض آتا ہے تو اس میں یہ دیکھنا بھی ضروری ہوتا ہے کہ اسے کس سٹیج کا اینڈومیٹریوسز ہے۔کیونکہ کچھ خواتین میں اس بیماری کی شدت بہت زیادہ ہوتی ہے اور یہی وجہ ہے کہ ٹشوز بچہ دانی کی ٹیوبز اور دیگر حصوں تک پھیل جاتے ہیں جس کی وجہ سے بہت سی خواتین میں حمل کا عمل بھی مکمل نہیں ہو پاتا۔

"""'میں سات سال تک ماں نہیں بن پائی'"""

فاطمہ نے اپنی زندگی میں اس بیماری کی وجہ سے آنے والی تبدیلیوں کے بارے میں بات کرتے ہوئے بتایا کہ شادی سے قبل ماہواری کے دنوں کی تکلیف کو محسوس کرکے لگتا تھا کہ زندگی بہت مشکل ہے۔

'مجھے اپنی جنس سے نفرت ہونے لگی تھی اور میں ہر مہینے ماہواری کی تاریخ آنے سے پہلے سخت ڈپریشن کا شکار ہو جاتی تھی کہ اب وہی سب دوبارہ سے شروع ہو جائے گا۔ میری جوانی کا وقت ایسے ہی گزر گیا۔'

انھوں نے بتایا کہ جب ان کی شادی ہو گئی تو ان کی مشکلات مزید بڑھ گئیں۔۔۔۔
میرے والدين نے میری شادی کردی۔ اس کے بعد چیزیں بدترین ہو گئیں اور میری تکلیف بڑھ گئی۔ مجھے اپنے سسرال والوں کے سامنے بہت شرمندگی محسوس ہوتی تھی جب ہر ماہ میرا شوہر مجھے ہسپتال لے کر جاتا تھا تو سب کو پتا چل جاتا تھا کہ اب فاطمہ کی طبیت خراب ہو گئی ہے۔ شادی کو سال گزرا تو سب نے کہنا شروع کر دیا کہ 'خوش خبری کب سناؤ گی۔'

فاطمہ کہتی ہیں کہ انھوں نے اپنے بہت سے الٹرا ساؤنڈ اور ٹیسٹ کروائے لیکن وہ سب نارمل آتے تھے اور ڈاکٹرز کہتے تھے آپ کو وہم ہے اور کوئی بات نہیں ہے۔

انھوں نے بتایا کہ مسلسل ضد کے بعد ڈاکٹروں نے ان کی لیپیکٹومی کی جس کے بعد معلوم ہوا کہ رما کو اینڈومیٹریوسز ہے۔۔۔۔

'میری ڈاکٹرز نے مجھے بتایا کہ میرے اندر اس بیماری کی شدت بہت زیادہ ہے اور ٹشوز کا پھیلاؤ بھی بہت زیادہ ہے۔ جس کی وجہ سے میں ماں بھی نہیں بن پا رہی۔ اس دن مجھے لگا کہ میری دنیا ختم ہو گئی ہے، کیونکہ میں جس ماحول میں پلی بڑھی ہوں اس میں عورت کو صرف ایک مقصد سے ہی دیکھا جاتا ہے کہ اس کی شادی کر دیں اور پھر وہ بچے پیدا کرے۔'

انھوں نے بتایا کہ کئی سال علاج کے باوجود کوئی فائدہ نہیں ہوا۔

'میں نے بہت سے آپریشن کروائے اور ادویات استعمال کی۔ ان نو سالوں میں میرے چھ بچے ضائع ہوئے جس سے مجھے اور زیادہ ڈپریشن ہونے لگا۔ میرے اردگرد کے لوگ مجھے کہتے تھے کہ اپنے شوہر کی دوسری شادی کروا دو اور کچھ لوگوں کے رویے اتنے تلخ ہوگئے کہ وہ مجھے اپنے بچوں کے نزدیک نہیں آنے دیتے تھے کہ تم اپنا سایہ ہم پر مت ڈالو۔'۔۔۔

پھر بالآخر آئی وی ایف کے عمل کے ذریعے رما کے یہاں بیٹے کی پیدائش ہوئی۔

آئی وی ایف یعنی ان وٹرو فرٹیلائیزیشن ، آئی وی ایف ایک ایسا طریقہ کار ہے جس میں ہم عورت کا انڈہ اور مرد کا سپرم لیتے ہیں اور اس کا کراس کروا کر عورت کے اندر ڈال دیتے ہیں۔۔۔۔

یہ عمل اس لیے کیا جاتا ہے کہ کیونکہ اینڈومیٹریوسز میں اضافی ٹشوز بچہ دانی پر چپک جاتے ہیں بعض اوقات cyst بنتی ہیں ۔جس کی وجہ سے بچہ دانی کے اندر کا نظام صحیح سے کام نہیں کر پاتا اور انڈے اور سپرم کا ملاپ نہیں ہوتا ہے۔
ضروری نہیں ہے کہ ایک ہی دفعہ علاج کروانے سے کامیابی ملے۔ اس کے لیے کئی خواتین کو کئی مرحلے پورے کرنے پڑتے ہیں اور اس علاج پر تقریباً چار سے چھ لاکھ روپے کی لاگت آتی ہے۔

رما کے مطابق یہ علاج بہت تکلیف دہ ہے اور اس علاج کے دوران آپ شدید ذہنی دباؤ کا شکار رہتے ہیں کیونکہ آپ ہر دفعہ یہی دعا کرتے ہیں کہ انڈے صحت مند بنیں اور علاج جلد از جلد کامیاب ہو جائے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ان کے کیس میں ڈاکٹرز کی جانب سے یہ کہا گیا کہ جب آپ کا حمل ہو جائے گا تو آپ کا اینڈومیٹریوسز بھی ٹھیک ہو جائے گا اور ایسا ہی ہوا۔

'میرے کامیاب حمل اور بیٹے کی پیدائش کے بعد میری بیماری میں بہت بہتری آئی لیکن ختم نہیں ہوئی۔'

ہر لڑکی میں اس بیماری کی نوعیت مختلف ہے اور اسے علاج کے ذریعے بہتر کیا جا سکتا ہے جس کے لیے بہت ضروری ہے کہ فوری طور پر اپنی ڈاکٹر کی ماہرانہ رائے لیں اور علاج کروائیں۔۔۔۔
۔فاطمہ یہ کہتے ہوئے خوشی سے رو پڑی۔ ۔

فاطمہ کے مطابق انھوں نے اپنی زندگی کے جو سال تکلیف میں گزارے اس سے کم از کم ان کی زندگی میں ایک انتہائی مثبت تبدیلی آئی .
اب وہ لوگوں کو اس بیماری پر آگاہی پروگرام کرواتی ہے اور اس کی بدولت کافی لڑکیاں اور خواتین کو فائدہ ہو رہا ہے ..
Take Home message
Endometriosis is a disease affecting lives of girls and females ...Treat it earlier

25/12/2022
23/12/2022
22/12/2022



20/12/2022

.....
...

چہرے پر غیر ضروری بال۔۔۔۔
سوال: میرے چہرے پر بال کثرت سے کیوں ہیں؟ کیا اِس بات کا میری جنسیت سے کوئی تعلق ہے؟
جواب:
جب چہرے پر بال کثرت سے اُگتے ہیں یا جسم کے ایسے حِصّوں پر جہاں معمول کے مطابق اختتامی بال (terminal hair) نہیں اُگتے یا بہت ہی کم ہوتے ہیں،تو اِس کیفیت کو Hirsutism کہا جاتا ہے ۔اِس کیفیت کا سبب بہت سی مختلف طبّی صورتیں ہوسکتی ہیں اور یہ عام طور پر کسی حد تک ہارمونی عدم توازن کی علامت ہوتی ہے۔ Hirsutism کی کیفیت جسم میں andronic ہارمون کی کثرت کی وجہ سے پیدا ہوتی ہے ،لہٰذا اِس کیفیت کو ماہواری کی بے قاعدگیوں اور انڈوں کے اخراج میں بے ترتیبی سے منسلک کیا جا سکتا ہے جیسا کہ بیضہ دانیوں میں گلٹیوں (PCOS) کے مرض میں دیکھا جاتا ہے۔

چہرے پر غیر ضروری بالوں کی موجودگی خواتین کے لیئے ایک پریشان کن معاملہ ہے۔ یہ آپ کے اعتماد میں کمی لانے اور ذہنی دبائو میں اضافے کا باعث بھی بنتا ہے۔ چہرے پر بالوں کی افزائش میں اضافے کی کئی ایک وجوہات ہو سکتی ہیں۔ ان میں ہارمونز کی بے اعتدالی اور کچھ خاص ادویات کا استعمال سر فہرست ہے۔ موجودہ دور کی ناقص غذائیں بھی بلا شبہ اس عارضے کی وجوہات میں سے ایک ہیں۔ آئیے دیکھتے ہیں کہ اس پریشانی سے نجات پانے کے لیئے ہم کن طریقوںکا استعمال کر سکتے ہیں۔

◀️کیمیائی طریقے۔۔۔
بہت سے افراد ان بالون کو کم کرنے اور چھپانے کے لیئے کیمیائی پراڈکٹس جیسے کہ بلیچ کریم کا استعمال کرتے ہیں۔ اس کے استعمال سے کچھ دنوں کے لیے بالوں کی رنگت ہلکی پڑ جاتی ہے اور وہ کم نظر آنے لگتے ہیں۔ لیکن اس طریقے کا استعمال ان ہی لوگوں کے لیئے کار گر ہے جو باقاعدگی سے اس کا استعمال جاری رکھ سکیں۔ اس کے علاوہ بلیچ میںموجود کئی کیمیکل ایسے بھی ہیں جو جلد کے نقصان دہ ہیں۔ حساس جلد والی خواتین اس کا استعمال نہ کریں۔ حاملہ اور دودھ پیتے بچوں کی مائیں بھی ان پراڈکٹس کے استعمال سے ہر ممکن پرہیز رکھیں۔

◀️ویکس اور تھریڈنگ۔۔
بالوں کو ویکس یا دھاگے کی مدد سے نکالنا بھی ایک عام طریقہ ہے۔ اگرچہ اس میں کیمیکل کا استعمال نہیں ہے لیکن ان طریقوں سے بالوں کی افزائش کم نہیں ہوتی۔ خاص طور پر تھریڈنگ سے بال موٹے نکلنے لگتے ہیں جو کہ زیادہ نمایاں ہوتے ہیں۔

◀️قدرتی اجزا کا استعمال۔۔
بہت سے قدرتی اجزا کے استعمال سے بھی چہرے اور جسم کے غیر ضروری بالوں کا خاتمہ ممکن ہے۔ ان میں سر فہرست ہلدی اور بیسن کا استعمال ہے۔ ان کو مسلسل استعمال کرتے رہنے سے بالوں کی افزائش کم ہونے لگتی ہے۔

◀️ الیکٹرولائسس۔۔
اگرچہ یہ ایک وقت طلب طریقہ ہے لیکن چہرے کے غیر ضروری بالوں سے نجات کا یہ ایک واحد مستقل ذریعہ ہے۔ اس پراسس میں بجلی کی مدد سے بالوں کی جڑوں کو ختم کر دیا جاتا ہے۔

◀️لیزر۔۔۔
غیر ضروری بالوں سے نجات کا یہ ایک جدید طریقہ ہے۔ روشنی اور حرارت کی تیز لہروں کی مدد سے بالوں کی جڑوں پر ہونے والا اثر ریر پا ہوتا ہے۔ اور بال ذیادہ دیر تک دوبارہ نہیں اگتے۔ یہ طریقہ مہنگا ہونے کے ساتھ ساتھ وقت طلب بھی ہے۔

17/12/2022
16/12/2022
15/12/2022
14/12/2022
12/12/2022
10/12/2022
07/12/2022
04/12/2022

بلوغت کے علامات اور مسائل بچیاں کیا کریں ۔۔۔۔۔

٭ لڑکیوں میں بلوغت کی علامات کیا ہیں؟
٭٭ بلوغت کی علامات کو تین اقسام میں تقسیم کیا جاتا ہے۔۔۔۔
پہلی ان کی چھاتیوں کے سائز کا بڑا ہونا۔
دوسری تولیدی اعضاء پر بالوں کا اگ آنا۔
اور تیسری اور آخری قسم مخصوص ایام کی ابتدا ہوناہے۔

نو سال کے بعد بچیوں کے جسم میں یہ تبدیلیاں رونما ہونا شروع ہوجاتی ہیں اور اسی عمر میں بچیوں کی چھاتیاں نمایاں ہوجاتی ہیں ۔ ماؤں کو چاہئے کہ ان سے پوچھیں کہ کیا ان کے تولیدی اعضاء پر بال آرہے ہیں یا نہیں۔ اگر وہ آ رہے ہوں تو ان کی صفائی کے بارے میں انہیں مناسب آگاہی فراہم کرنی چاہئے۔۔۔۔
بچیوں کو 10سے16سال تک کی عمرمیں حیض آنا شروع ہوجاتا ہے۔ اگرایام 10سال کی عمر سے پہلے ہی شروع ہوجائیں تو اسے نا پختہ شباب (Premature puberty) اور اگروہ 16سال کی عمر کے بعد بھی شروع نہ ہوں تو اسے تاخیر سے شباب (Delayed puberty) کہا جاتا ہے۔
دونوں صورتوں میں ڈاکٹر سے لازماً رابطہ کرنا چاہئے تاکہ مسئلے کی بروقت تشخیص کر کے علاج کو یقینی بنایا جاسکے۔۔۔

٭ مخصوص ایام کا دورانیہ کتنے دنوں پر مشتمل ہوتو ہم اسے نارمل کہیں گے؟
٭٭ اس کا نارمل دورانیہ 28دنوں پر مشتمل ہوتا ہے۔اگر وہ 21 دنوں سے کم اور 35 دنوں سے زیادہ عرصے تک چلے جائیں توڈاکٹر سے رجوع کرنے میں سستی نہ کریں۔

٭ ان ایام میں خون آنے کی مقدار کتنی ہونی چاہئے؟
٭٭ اگر بچی دن میں دو سے زیادہ پیڈز تبدیل کررہی ہو یا اسے کلاٹنگ زیادہ ہورہی ہو تو ڈاکٹر سے ضرور مشورہ کرلیں۔ بعض بچیاں عادتاً بھی ضرورت سے زیادہ پیڈز تبدیل کرتی ہیں۔ اس صورت میں ان کی مائوں کو چاہئے کہ پہلے خود تسلی کرلیں‘ پھر ڈاکٹر سے رجوع کریں۔ ڈاکٹر اس کی ظاہری صورت حال دیکھ کریاخون کے ٹیسٹ/ الٹراساؤنڈ کی مدد سے جائزہ لے گی کہ اس کی صورتحال نارمل ہے یا نہیں۔ اگر تشویش کی بات ہوئی تو وہ مزید ٹیسٹ تجویز کر سکتی ہے۔

٭ کیا حیض کی زیادتی یا کمی کا تعلق ہارمونز کے ساتھ بھی ہوتا ہے؟
٭٭ ماہواری کے دوران خواتین کے جسم میں بہت سی تبدیلیاں آتی ہیں جن میں تھائی رائیڈ ہارمون کی مقدار میں زیادتی یا کمی کا ہونا بھی شامل ہے۔ اگر کسی بچی کو نوعمری میں زیادہ خون آئے تو اس کی ایک وجہ تھائی رائیڈ کی مقدار کا بڑھ جانا اور اگرکم آئے تو اس کی کمی ہوسکتا ہے۔ ایسے میں ڈاکٹر سے رجوع کرنا بہترہوتا ہے کیونکہ اصل وجہ وہی آپ کو بتائے گی۔۔۔۔

٭ اس مرحلے پر ماؤں کا کردار کیا ہے؟
٭٭ بچوں اور بچیوں کو عہد شباب کے آغاز پر ماں باپ کی طرف سے راہنمائی کی اشد ضرورت ہوتی ہے۔ گھر کے بڑے بزرگ ،اساتذہ اور والدین بہت پیار اور سلیقے سے انہیں سمجھائیں کہ یہ تبدیلیاں نارمل ہیں۔ اگر وہ ایسا نہیں کریں گے تو بچے ان کے بارے میں ارد گرد سے معلومات لیں گے جو غلط ہی نہیں‘ گمراہ کن بھی ہو سکتی ہیں۔ٹیچرز کو چاہئے کہ وہ اس عمر کی بچیوں کو بتائیں کہ یہ بلوغت کی عام تبدیلیاں ہیں جن سے ہر لڑکی گزرتی ہے۔ انہیں بتایا جائے کہ مخصوص ایام کی چند علامات پیٹ یا کمر میں درد اور خون کا آنا ہے اور اگر آپ کے ساتھ ایسا ہو تو پریشان نہیں ہونا اور فوراً اپنی امی کو بتانا ہے۔ اس طرح کی ڈسکشن میں ماہرامراض زچہ وبچہ کو بھی شامل کیا جاسکتا ہے جو بچیوں کے سوالات کے جوابات دیں۔
اس حوالے سے دوسرا نکتہ غیر ضروری بالوں کی صفائی ہے۔ وہ بچیوں کو بتائیں کہ ہر ہفتے کے بعد اور مجبوری کے عالم میں زیادہ سے زیادہ 40 دنوں کے بعد آپ نے تولیدی اعضاء پر پائے جانے والے بالوں کو لازماًصاف کرنا ہے۔ ان کی صفائی کے لئے قدرتی اشیاء سے تیار کردہ ویکس(wax) سب سے بہترین ہے‘ تاہم آج کل مارکیٹ میں اس مقصد کے لئے مختلف کریمیں اوراسپرے بھی دستیاب ہیں ۔ یہ آرام دہ اور استعمال میں آسان ضرور ہیں لیکن بعض اوقات انفیکشنز اور جلدی مسائل کا سبب بھی بن سکتے ہیں۔اس لئے میرا مشورہ یہی ہے کہ قدرتی طریقوں کو ترجیح دیں اور بچیوں کو چھوٹی عمر سے ہی ان کا عادی بنائیں تاکہ مستقبل میں انہیں ذاتی صفائی کے ناکافی انتظام کے باعث ہونے والے مسائل سے محفوظ رکھا جاسکے۔۔۔۔

٭ مخصوص ایام کے دوران کن باتوں کا خیال رکھا جائے؟
٭٭ مخصوص ایام کے دوران زیرجامے کاٹن کے پہنیں تاکہ ان میں سے ہوا کا گزرہوتا رہے۔ اس کے علاوہ پیڈز دن میں دو سے تین بار لازما تبدیل کریں ۔ اگرزیرجامہ خون سے آلودہ ہوجائے تو اسے صابن سے دھو کر دھوپ میں خشک کرنا چاہئے تاکہ اسے جراثیم سے پاک کیا جاسکے۔ ہمارے ہاں یہ تاثرعام پایاجاتا ہے کہ ایام کے دوران غسل نہیں کرناچاہئے ۔یہ بالکل غلط ہے ۔ اس کے برعکس گرمیوں میں روزانہ یا ایک دن چھوڑ کر لازماً غسل کریں تاکہ انفیکشن سے بچا جا سکے۔۔۔۔

٭ کچھ لوگ کہتے ہیں کہ تولیدی اعضاء پر صابن یا اسپرے وغیرہ استعمال نہیں کرنا چاہئے ۔ آپ کی کیا رائے ہے؟
٭٭ بیوٹی سوپ جو عام طور پر نہانے کے لئے استعمال کئے جاتے ہیں‘ تولیدی اعضاء پربھی استعمال کئے جاسکتے ہیں البتہ میڈیکیڈڈ صابن اس مقصد کے لئے استعمال نہ کئے جائیں ۔ اسی طرح پرفیوم،مختلف اسپرے یا پاؤڈر کے استعمال سے بھی گریز کرنا چاہئے کیونکہ ایسا کرنے سے انفیکشنز ہونے کے امکانات بڑھ جاتے ہیں۔

٭ بچیوں کے لئے بلوغت کی ابتدا میں کون سے ٹیسٹ ضروری ہیں اور کون سی ویکسینیشن کروا لینی چاہئے؟
٭٭ 9 سے26 سال کی ہر بچی کو ایچ پی وی(HumanPapillomavirus) کی ویکسین ضرور لگوا لینی چاہئے تاکہ کل کی مائیں بانجھ پن اور بچہ دانی کے کینسر سے محفوظ رہ سکیں۔ یہ ویکسین بچیوں کو ہی نہیں‘ بچوں کو بھی لگواناچاہئے تاکہ انہیں مستقبل میں تولیدی مسائل سے بچایا جا سکے۔بچیوں کو شادی سے چار ماہ پہلے روبیلا (Rubella) ویکسین بھی لگوالینی چاہئے تاکہ بعد میں ابنارمل بچے کی پیدائش یا جلد اسقاط حمل سے محفوظ رہا جاسکے۔

٭ مخصوص ایام میں درد اور کمزوری سے نجات کے لئے گھر پر کیا اقدامات کئے جاسکتے ہیں؟
٭٭ کچھ گھریلو نسخے اس درد سے نجات میں مفیدثابت ہوتے ہیں۔ مثال کے طورپر مخصوص ایام میں گرم مشروبات پینا فائدہ مند ہے۔ ان میں سے ایک دار چینی کا یا سادہ قہوہ ہے جوبنانے میں آسان ہے اور مزیدار ہونے کے ساتھ ساتھ درد سے فوری نجات کے لئے بھی بہترین ہے۔ حیض کے دوران جسم کو گرم رکھنایا ٹکور کرنا بھی فائدہ دیتا ہے۔ گرم پانی کی بوتل اپنی کمر کے پیچھے یا رانوں کے درمیان رکھنے سے جسم گرم ہو جاتا ہے اور خون کی گردش تیز ہونے کے باعث ان اعضاء میں درد نہ ہونے کے برابر رہ جاتا ہے۔ مخصوص ایام کے دوران کولامشروبات سے مکمل پرہیزکرنا چاہئے‘ اس لئے کہ یہ پیٹ میں گیس پیدا کرنے کاسبب بنتے ہیں۔گیس کے باعث پیٹ میں درد اور مروڑ میں اضافہ ہوتا ہے جس سے یہ تکلیف بھی بڑھ جاتی ہے۔ بہت سی خواتین حیض کے دوران ورزش کرنے سے اجتناب کرتی ہیں حالانکہ اس سے نہ صرف جسم صحت مند ہوتا ہے بلکہ بیزاری اور چڑچڑے پن سے بھی محفوظ رہا جا سکتا ہے۔ زیادہ ٹھنڈا پانی پینا عام دنوں میں بھی نقصان دہ ہے‘ اس لئے کہ یہ جسم میں چربی جمع کرنے کے علاوہ ہارمونیائی تبدیلوں کا بھی باعث بنتا ہے ۔ ان ایام کے دوران اس سلسلے میں خصوصی احتیاط کی ضرورت ہوتی ہے۔ غسل یا صفائی کے لئے بھی نیم گرم پانی کا استعمال ہی بہتر رہتاہے جس سے درد کی شدت میں کمی آتی ہے۔ البتہ اپنی خوراک میں زیادہ کیلوریز والی ریشہ دار غذائوں‘ خصوصاً موسمی پھلوں اور سبزیوں کا استعما ل بڑھا دینا چاہئے۔ وٹامن سی والی اشیاء کا استعمال زیادہ کریں کیونکہ یہ آپ کے جسم میں آئرن کو بہتر جذب کرنے میں مددگار ثابت ہوتی ہیں۔ مزیدبرآں اس عرصے میں پانی زیادہ پینا چاہئے۔۔۔۔


30/11/2022
28/11/2022

Cyst in o***y

27/11/2022
22/11/2022
21/11/2022

What is uterus didelphys?

Uterus didelphys is a rare condition where a person develops two uteruses. It’s also called a double uterus. A double uterus is a congenital abnormality that you are born with. Your two uterine cavities are narrower than the cavity of a typical uterus. Each uterus has its own fallopian tube and o***y.
A uterus starts as two ducts. As an unborn baby (fetus) develops, these ducts join together to create the uterus. Your uterus is one hollow organ and looks like an upside-down pear. If you have uterus didelphys, the two ducts don’t join together. Instead, each duct creates its own uterus, which means you have two. Some people with a double uterus may also have two cervixes and two vaginal canals. Instead of having a pear-shaped uterus, if you have uterus didelphys, your uteruses resemble bananas.

How common is uterus didelphys?
Uterus didelphys is rare and only affects about 0.3% of the population. It’s one of the least common uterine abnormalities.

SYMPTOMS AND CAUSES

What are the symptoms of uterus didelphys?

Most people don’t know they have uterus didelphys because it doesn’t cause any symptoms. Instead, it’s discovered during a routine pelvic exam or during investigation for recurrent miscarriages or severe menstrual pain.
If you’re experiencing symptoms from uterus didelphys, you might have:

Dyspareunia
Painful cramping before and during your period.
Heavy bleeding during your period.
Leaking blood when using a tampon (tampon is only in one uterus and not the other).

What causes a uterus didelphys?

Uterus didelphys occurs when two ducts (the Mullerian ducts) don’t fuse properly during development.

How does uterus didelphys affect periods?

Your period can be affected by uterus didelphys in one or all of the following ways:

Very heavy or abnormal bleeding during menstruation.

Painful periods.

Pelvic cramping and pressure.

Difficulty using tampons.

DIAGNOSIS AND TESTS

How is uterus didelphys diagnosed?

Your healthcare provider may diagnose a double uterus during a routine pelvic exam after feeling two cervixes or two vaginas. They’ll likely order additional imaging tests to confirm uterus didelphys.

What tests will be done to diagnose uterus didelphys?

Ultrasound. abdominal or transvaginal ultrasound.
Magnetic resonance imaging (MRI).
Sonohysterogram.
Hysterosalpingography

MANAGEMENT AND TREATMENT

Can a uterus didelphys be fixed?

Yes, uterus didelphys can be fixed. Most healthcare providers don’t recommend treating a double uterus unless you experience symptoms like repeat late pregnancy loss. Surgery to merge the uteruses can weaken your remaining uterus. If you have painful in*******se, the associated longitudinal vaginal septum (resulting in two vaginas) can be removed surgically.
Can uterus didelphys cause infertility?

Uterus didelphys can cause infertility in some people. In most cases, the shape of your uterus doesn’t prevent you from conceiving or getting pregnant. However, it does increase your risk for miscarriage.

Will I have a miscarriage if I have uterus didelphys?

You will not have a miscarriage just because you have a double uterus. However, your chance of miscarriage is slightly higher. This is because your uterus is smaller, which restricts the growth of the fetus. The atypical shape can also affect the placenta and the blood flow within your uterus. If you have repeat late second trimester miscarriages, your healthcare provider may suggest surgery to fix your double uterus. Surgical treatment may increase your chances for a full-term pregnancy.

Can a woman with two uteruses get pregnant?

Yes, you can get pregnant if you have uterus didelphys. Your healthcare provider will monitor your pregnancy closely to ensure you and your baby are healthy. You’re at an increased risk for several pregnancy complications.

What are the pregnancy complications of a uterus didelphys?

You are at greater risk for pregnancy complications if you have a double uterus.
The pregnancy complications associated with a double uterus are:

Miscarriage.

Early labor.

Breech babies.

Cesarean birth.

Low birth weight.

Growth restriction.

Torn vaginal septum at the time of vaginal delivery.

Are there health risks associated with uterus didelphys?

Most people who have a double uterus lead healthy lives and don’t have any significant health complications. The following risks are associated with a double uterus:

Complications during pregnancy including miscarriage and premature birth.

Increased risk for cesarean section due to because your baby isn’t well positioned for birth.

Videos (show all)

https://youtu.be/w3fSa4CrP2kحمل کے دوران اموات سے پیچیدگیاں اور پیدائش کے بعد دیکھ بھال .Dr Nasira Naseem.shamim akhtar ...
https://youtu.be/fLQQx4BkacQحمل کے دوران بچوں کی اموات،وجوہات  live at TV DrNasiraNaseem۔ShamimAkhtarclinic#03136260940
https://youtu.be/9PhMPM3LWJ0Dr NasiraNaseemShamimAkhtarclinic#appointment_no 03136260940
https://youtu.be/WceU9IawnTUاٹھرا کیا ہے؟ بچوں کا بار بار ضاعء ہونا ۔Dr Nasira Naseem.shamimAkhtarclinic.#03136260940
DrNasiraNaseem.shamimakhtarclinic.#03136260940U tube channelhttps://youtu.be/XtJYUwV54z4
https://youtu.be/icDYFCv5rqU
روزے میں جسم کے اسٹورز کس طرح استعمال ہوتے ہیں؟ https://youtu.be/aviPxCefMMoDr Nasira NaseemShamimAkhtarclinic#031362609...
https://youtu.be/NSy5PkPkVNsروزے کے حمل پر اثرات اور خواتین کے لئے ہدایات Dr Nasira NaseemShsmimAkhtar clinic near no 9 ...
روزہ ہمارے جسم کی فالتو چربی کو کس طرح متاثر کرتا ہے ۔۔Dr Nasira NaseemShamimAkhtarclinic#Appointment_no_03136260940http...
#Intermittent_fastingDr Nasira NaseemShamimAkhtar clinic#03136260940https://youtu.be/cYibJ4o05E8Like subscribe u tube ch...

Location

Products

Health Care Services

Telephone

Address


Multan
60000

Other Obstetrics and Gynaecology in Multan (show all)
Hareem Family Care Hareem Family Care
Opposite Ppsc Office Tounsa House Road Garden Town
Multan, 60000

committed for Mother and child Health care

Free S***m Donor Pakistan Pregnancy Guide Fertility Services By Doctor Free S***m Donor Pakistan Pregnancy Guide Fertility Services By Doctor
Multan, 60000

We are providing free Pregnancy Guide and free Fertility Services in Pakistan. We also provide Premi

Gynaepedia by Dr.Mahvish Gynaepedia by Dr.Mahvish
Old Shujabad Road Farooq Pura Multan Hospital
Multan

women health regarding pregnancy and menstruation abnormalities Infertility fibroid uterus ovaria

Dr. Sumera Malik ,FCPS Gyne Dr. Sumera Malik ,FCPS Gyne
Multan Clinics Opposite Mall Of Multan, Bosan Road
Multan, 60000

Consultant Gynecologist and Obstetrician. M.B.B.S, F.C.P.S, M.Phil.(Microbiology)*

Dr. Zubair Siddiqi Dr. Zubair Siddiqi
Shershah Road
Multan, 60000

Dr. Zubair Siddiqi is a health care professional with over 15 years of experience in the field of Ho

Ghazi Lab, Bone Marrow & FNAC Clinic Multan Ghazi Lab, Bone Marrow & FNAC Clinic Multan
Nishtar Road Multan
Multan, 66000

The mission of Ghazi Lab Multan and FNAC Clinic (GLM) is to add value added pathololgy services in s

Virgin Again gel in Pakistan 03011256666 Virgin Again gel in Pakistan 03011256666
Multan
Multan, 61000

Tighten The Va**nal like a young girl. Firming The Va**na Shape like a fresh (rose) Enhances tighten

Original Sexy Lady Or****ic Gel For Women Price In Paksitan-03021256666 Original Sexy Lady Or****ic Gel For Women Price In Paksitan-03021256666
Multan
Multan, 34450

Sexy Lady Or****ic Gel For Women 3in1 -(Perfect, Firm & Antibacterial) This gel lubricates the skin,

Dr. Nosheen Aqib-Gynecologist Dr. Nosheen Aqib-Gynecologist
Multan, 60000

Obstetrics and Gynecology is the field of medicine that focuses on the care of the female reproducti

Breast Enlargement Cream In Pakistan- 03011256666 Breast Enlargement Cream In Pakistan- 03011256666
Multan, 61000

Breast enlargement Cream with perfect Results Money Back Guarantee Safe to Use big breast 03011256666

Dr.Shazia Noreen Gynaecologist Dr.Shazia Noreen Gynaecologist
Nishtar Road Multan
Multan, 66000

Infertility specialist