Speech Language Pathalogist/Therapist

Speech Language Pathalogist/Therapist

Comments

Golden Opportunity for Parents# The ABLLS-R introductory workshop will provide participants with the tools to analyze and track learner skills and develop a comprehensive language-based curriculum for children. The Assessment of Basic Language and Learning Skills (The ABLLS-R) ABLLS, provide an assessment tool, curriculum guide, and skills-tracking system that will help guide the instruction of language and critical learner skills for children with autism or other developmental disabilities.
How technology has altered communication?
How technology has altered communication?
*International Therapy Services* is inviting you to a scheduled Zoom meeting.

*Topic:* How to build eye contact and compliance in child

*Time:* Aug 29, 2021 03:00 PM Asia/Karachi

Join Zoom Meeting
https://us04web.zoom.us/j/74906922406?pwd=eXk2WWdiV2xPT1YvWHBIR0M2UWJXdz09

Meeting ID: 749 0692 2406
Passcode: D5c0zk
ہماری فیس بک آئی ڈی اور سے متعلقہ پیج اور گروپ ہیک ہو چکے ہیں . ہماری ٹیم کام کر رہی ہے. جلد ہی مثبت نتائج ملیں گے.
پیج اور گروپ ممبران سے گزارش ہے کہ یہ پیج جوائن کر لیں.
شکریہ

https://www.facebook.com/AdvanceSpeechTherapy/
AoA
Available male Physiotherapist in Johar Town Lahore
WhatsApp:03218766068
any speech therapist at Bahawalpur ????
I want PLS-5 for my child speech at home. Any one plz give me a favor and share with me
A special educator and speech therapist required for 9 years old Boy( preferred home session) NorthNazimabad ..no commentplz just inbox
WE ARE LOOKING FOR DISTRIBUTORS WORLDWIDE.
Great investment opportunity as the tool is very unique.
https://youtu.be/5IIsZwEHiGY

Contact us: [email protected]
WE ARE LOOKING FOR DISTRIBUTORS WORLWIDE.
Great investment opportunity as the tool is very unique.
https://youtu.be/5IIsZwEHiGY
Contact us: [email protected]

Advance Speech Therapy Services

Operating as usual

11/01/2022

#DonationAppeal
نام :شہباز احمد
گوجرانوالہ

شہباز صاحب جسمانی معذوری کا شکار ہیں اور چلنے پھرنے سے قاصر ہیں. آج کل شدید سردی کی وجہ سے صحت کے مسائل کا شکار ہیں. وہیل چئیر استعمال کرنے کی وجہ سے جسم بری طرح اکڑ چکا ہے. اور شدید کھانسی اور رعشہ کی وجہ سے بہت پریشان ہیں. ڈاکٹر نے ہدایات دی ہیں کہ دن میں تین مرتبہ نیبولائز کریں تا کہ سانس لینے میں دشواری نہ ہو. گھر میں گیس نہیں جس کی وجہ سے گرم پانی بمشکل دستیاب ہوتا ہے اور وہیل چئیر کی وجہ سے بار بار کلینک جانا ممکن نہیں.
شہباز صاحب نے درخواست کی ہے کہ مغیر حضرات سے مدد کی اپیل کی جائے تا کہ ان کے لئے نیبولائزر لیا جا سکے.میری آپ سب سے درخواست ہے کہ دل کھول کر عطیات دیں تا کہ ان کی اور جیسے باقی دوستوں کی با آسانی مدد کی جا سکے.

نوٹ : شہباز صاحب میرے ساتھ فیس بک پر ایڈ ہیں. اگر آپ انکی براہ راست مدد کرنا چاہیں تو رابطہ کریں اور اگر آپ میرے توسط سے مدد کرنا چاہیں تو مجھ سے رابطہ کریں.
شکریہ

Qudsia Zahra Syed-Speech Language Pathologist
03345322674

#DonationAppeal
نام :شہباز احمد
گوجرانوالہ

شہباز صاحب جسمانی معذوری کا شکار ہیں اور چلنے پھرنے سے قاصر ہیں. آج کل شدید سردی کی وجہ سے صحت کے مسائل کا شکار ہیں. وہیل چئیر استعمال کرنے کی وجہ سے جسم بری طرح اکڑ چکا ہے. اور شدید کھانسی اور رعشہ کی وجہ سے بہت پریشان ہیں. ڈاکٹر نے ہدایات دی ہیں کہ دن میں تین مرتبہ نیبولائز کریں تا کہ سانس لینے میں دشواری نہ ہو. گھر میں گیس نہیں جس کی وجہ سے گرم پانی بمشکل دستیاب ہوتا ہے اور وہیل چئیر کی وجہ سے بار بار کلینک جانا ممکن نہیں.
شہباز صاحب نے درخواست کی ہے کہ مغیر حضرات سے مدد کی اپیل کی جائے تا کہ ان کے لئے نیبولائزر لیا جا سکے.میری آپ سب سے درخواست ہے کہ دل کھول کر عطیات دیں تا کہ ان کی اور جیسے باقی دوستوں کی با آسانی مدد کی جا سکے.

نوٹ : شہباز صاحب میرے ساتھ فیس بک پر ایڈ ہیں. اگر آپ انکی براہ راست مدد کرنا چاہیں تو رابطہ کریں اور اگر آپ میرے توسط سے مدد کرنا چاہیں تو مجھ سے رابطہ کریں.
شکریہ

Qudsia Zahra Syed-Speech Language Pathologist
03345322674

31/12/2021

#HappyNewYear

New goals, new dreams, new successes Everything awaits you. Forget about failures. Correct your mistakes. Success is definitely yours.

Advance Speech Therapy Services Pakistan 🇵🇰
Nisar Hospital, Peshawar Road, Rawalpindi
03345322674

#HappyNewYear

New goals, new dreams, new successes Everything awaits you. Forget about failures. Correct your mistakes. Success is definitely yours.

Advance Speech Therapy Services Pakistan 🇵🇰
Nisar Hospital, Peshawar Road, Rawalpindi
03345322674

26/12/2021

#کیا_آپ_کا_بچہ_3_سال_کی_عمر_تک_بولنا_نہیں_سیکھ #سکا؟

⬅️جانیں وجوہات و علاج

⬅️بچہ دیر سے کیوں بولنا سیکھتا ہے؟؟؟

⬅️دیر سے بولنے سے کیا مراد ہے؟؟؟

⬅️3 سال کی عمر کا بچہ کتنا بول سکتا ہے؟؟؟

بچہ جب اپنی عمر کے دو سال مکمل کر لیتا ہے تو نارمل حالت میں وہ تقریبا 50 الفاظ بولنا شروع کر دیتا ہے اس کے ساتھ ساتھ وہ دو سے تین جملے بولنا بھی شروع کر دیتا ہے ۔ جب کہ تین سال کی عمر تک یہ تعداد تقریبا 1000 الفاظ تک پہنچ جاتی ہے جب کہ اس کے ساتھ ساتھ بچہ اب چار سے پانچ جملے بولنا بھی شروع کر دیتا ہے.

لیکن اگر آپ کا بچہ اس عمر تک یہ سب سیکھنے میں ناکام رہتا ہے تو یہ اس بات کا ثبوت ہے کہ بچہ بولنےکے عمل میں دشواری کا سامنا کر رہا ہے جس کی مختلف وجوہات ہو سکتی ہیں ۔ یاد رکھیں اگر بچہ بولنے میں تاخیر کا سامنا کر رہا ہے تو ہمیشہ اس کا مطلب کوئی بیماری ہونا نہیں ہوتا ۔ بلکہ بعض بچے قدرتی طور پر چیزوں کو دیر سے سیکھتے ہیں ۔

⬅️بچہ دیر سے کیوں بولنا سیکھتے ہیں؟؟؟

⬅️وجوہات

بعض اوقات بچے کے دیر سے بولنے کا ایک سبب اس کی سماعت میں خرابی ہو سکتی ہے اس کے علاوہ اس کی نشونما کے مسائل اور دماغی صحت بھی اس کے اسباب میں شامل ہو سکتی ہے.

بچے کا بول نہ سکنا اور گفتگو نہ کر سکنا دو علیحدہ باتیں ہیں ۔ عام طور پر وقت کے ساتھ ساتھ بچہ اپنی بات سمجھانے کے لیۓ مختلف اشارے یا آوازیں سیکھ لیتا ہے ۔ جب کہ چیزوں کو درست نام اور آواز سے نہ پکار سکنے کا مطلب بچے کا گفتگو کرنے کے عمل میں تاخیر میں شامل ہوتی ہے

اس وجہ سے والدین کے لیۓ یہ بہت ضروری ہے کہ وہ بچے کی کیفیات کا مشاہدہ کر کے اس بات کا فیصلہ کریں کہ درحقیقت بچے کا اصل مسلہ کیا ہے کیون کہ علامات کی بنا پر اکثر یہ دونوں مسائل ایک جیسے ہی محسوس ہوتے ہیں.

⬅️دیر سے بولنے سے کیا مراد ہے؟؟؟

عام طور پر ایک بچہ پیدا ہونے کے کچھ دنوں کے بعد ہی بچہ مختلف قسم کی آوازیں نکالنا شروع کر دیتا ہے ۔ اسکےبعد وہ اکثر آوازیں بھی نکالنا شروع کر دیتا ہے ۔ مگر اس کے ساتھ ساتھ وقت گزرنےکے ساتھ ساتھ بے معنی آوازیں بامعنی لفظوں میں تبدیل ہونا شروع ہو جاتی ہیں ۔ لیکن اگر 2 سال کی عمر تک بچہ اس کوشش میں کامیاب نہ ہو سکے تو یہ اس بات کا ثبوت ہے کہ بچے کو بولنا سیکھنے میں دشواری کا سامنا ہے

⬅️3 سال کی عمر کا بچہ کتنا بول سکتا ہے؟؟؟

ایک تین سال کا بچہ اس عمر تک پہنچتے پہنچتے تقریبا 1000 الفاظ کا استعمال سیکھ چکا ہوتا ہے ۔ اس کے ساتھ ساتھ وہ ماں یا باپ کو اور قریبی رشتوں کو پکار سکتا ہے۔ اس کے علاوہ وہ مختلف اسم ، فعل اور صفات کا استعمال چھوٹے جملوں میں کر سکتا ہے ۔ چھوٹی نظمیں توتلی زبان میں ردھم کے ساتھ پڑھ سکتا ہے

⬅️دیر سے بولنے کی علامات

اگر بچہ بول چال میں تاخیر کا شکار ہو تو ان علامات کا اظہار 2 سال کی عمر سے ہونا شروع ہو جاتا ہے ۔

اگر بچہ دو سال کی عمر تک تقریبا 50 الفاظ نہ بول سکے

ڈھائی سال کی عمرتک چھوٹے جملے نہ بول سکے

تین سال کی عمر تک اس کی بولنے کی صلاحیت 200 الفاظ سے کم ہو اور وہ چیزوں کو ان کے نام سے نہ پکار سکے

اس کے بعد کی عمر میں ایک بار کا یاد کروایا گیا لفظ دوبارہ استعمال نہ کر سکے

تو یہ تمام علامات اس بات کا ثبوت ہیں کہ بچہ دیر سے بولنے کی تکلیف میں مبتلا ہے

⬅️دیر سے بولنے کی وجوہات

◀️زبان میں خرابی

بعض بچوں کی زبان پیدائشی طور پر منہ کے نیچے والے حصے سے اس طرح جڑی ہوتی ہے کہ اس کو حرکت کرنے میں دشواری ہوتی ہے اس صورت میں بہت سارے الفاظ کی ادائگی بچہ نہیں کر سکتا ہے اور اگر کرنے کی کوشش بھی کرتا ہے تو وہ سننے والے کی سمجھ سے بالاتر ہوتا ہے ۔

◀️لفظوں کو بامعنی جملوں میں تبدیل نہ کر سکنا

کچھ بچے وقت کے ساتھ ساتھ الفاظ اور چیزوں کا نام تو سیکھ جاتے ہیں مگر ان کو بوقت ضرورت جملوں کی صورت میں استعمال کرنے کی صلاحیت سے محروم ہوتے ہیں ۔ ایسا عام طور پر ان بچوں کے ساتھ ہوتا ہے جن کی پیدائش قبل از وقت ہوتی ہے یا پھر وہ اعصابی اور دماغی کمزوری میں مبتلاہوتے ہیں.

◀️سماعت کی کمزوری

بولنے کا عمل سننے کے عمل سے جڑا ہوتا ہے کیوں کہ بچہ اسی وقت الفاظ کو سیکھ سکے گا جب کہ وہ ان کو بولنے کے قابل ہو گا ۔اگر پیدائشی طور پر وہ سماعت کے قابل نہ ہوا تو ایسے بچے منہ سے بے معنی آوازيں تو نکال سکتے ہیں لیکن بامعنی الفاظ کو بولنے کی صلاحیت کے حامل نہیں ہوتے ہیں ۔

◀️آٹزم

آٹزم کا شکار بچہ جہاں دوسرے بہت سارے مسائل کا سامنا کرتا ہے وہیں اس کو گفتگو کرنے میں بھی مشکل کا سامنا ہوتا ہے ۔ اور وہ بچے ایک ہی لفظ کو بار بار دہراتے رہتے ہیں لیکن ان کو بامعنی جملوں میں تبدیل کرنے سے محروم ہوتے ہیں

⬅️دیر سے بولنے کا علاج

عام طور پر ایسے بچوں کے علاج کے لیۓ جو تیکنیک استعمال کی جاتی ہے وہ کچھ اس طرح سے ہوتی ہے ۔

◀️اسپیچ لینگوئج تھراپی

یہ وہ طریقہ کار ہے جس کے مطابق بچوں کو بولنے کی مشق ماہر اسپیچ تھراپسٹ کی زیر نگرانی کروائی جاتی ہے ۔

⬅️دیر سے بولنے کی وجوہات کا علاج

اس کے ساتھ ساتھ ان وجوہات کو جن کی بنا پر بچہ دیر سے بول رہا ہے ان کی شناخت کی جاتی ہے اور اس مسئلے کے حل کے لیۓکام کیا جاتا ہے مثال کے طور پر

◀️اگر سماعت کمزور ہے تو اس کے لیۓ ہئيرنگ ایڈ استعمال کیا جاتا ہے اور پھر اسپیچ تھراپی کی جاتی ہے. آلہ سماعت لگوانے کے بعد اسپیچ تھراپی ایک لازمی عمل ہے.

◀️زبان میں ہونے والی تکالیف کا علاج اور ضروری سرجری کروائي جاتی ہے

◀️دماغی کمزوری کی صورت میں اس کے علاج کے لیۓ کوششیں کی جاتی ہیں.

بچوں کے دیر سے بولنے کی صورت میں اسپیچ لینگوئج پیتھالوجسٹ آپ کے لیۓ معاون ثابت ہو سکتے ہیں. مزید معلومات کے لئے دئیے گئے نمبر پر رابطہ کریں.
شکریہ

Advance Speech Therapy Services Pakistan 🇵🇰
Nisar Hospital, Peshawar Road, Rawalpindi
03345322674

#کیا_آپ_کا_بچہ_3_سال_کی_عمر_تک_بولنا_نہیں_سیکھ #سکا؟

⬅️جانیں وجوہات و علاج

⬅️بچہ دیر سے کیوں بولنا سیکھتا ہے؟؟؟

⬅️دیر سے بولنے سے کیا مراد ہے؟؟؟

⬅️3 سال کی عمر کا بچہ کتنا بول سکتا ہے؟؟؟

بچہ جب اپنی عمر کے دو سال مکمل کر لیتا ہے تو نارمل حالت میں وہ تقریبا 50 الفاظ بولنا شروع کر دیتا ہے اس کے ساتھ ساتھ وہ دو سے تین جملے بولنا بھی شروع کر دیتا ہے ۔ جب کہ تین سال کی عمر تک یہ تعداد تقریبا 1000 الفاظ تک پہنچ جاتی ہے جب کہ اس کے ساتھ ساتھ بچہ اب چار سے پانچ جملے بولنا بھی شروع کر دیتا ہے.

لیکن اگر آپ کا بچہ اس عمر تک یہ سب سیکھنے میں ناکام رہتا ہے تو یہ اس بات کا ثبوت ہے کہ بچہ بولنےکے عمل میں دشواری کا سامنا کر رہا ہے جس کی مختلف وجوہات ہو سکتی ہیں ۔ یاد رکھیں اگر بچہ بولنے میں تاخیر کا سامنا کر رہا ہے تو ہمیشہ اس کا مطلب کوئی بیماری ہونا نہیں ہوتا ۔ بلکہ بعض بچے قدرتی طور پر چیزوں کو دیر سے سیکھتے ہیں ۔

⬅️بچہ دیر سے کیوں بولنا سیکھتے ہیں؟؟؟

⬅️وجوہات

بعض اوقات بچے کے دیر سے بولنے کا ایک سبب اس کی سماعت میں خرابی ہو سکتی ہے اس کے علاوہ اس کی نشونما کے مسائل اور دماغی صحت بھی اس کے اسباب میں شامل ہو سکتی ہے.

بچے کا بول نہ سکنا اور گفتگو نہ کر سکنا دو علیحدہ باتیں ہیں ۔ عام طور پر وقت کے ساتھ ساتھ بچہ اپنی بات سمجھانے کے لیۓ مختلف اشارے یا آوازیں سیکھ لیتا ہے ۔ جب کہ چیزوں کو درست نام اور آواز سے نہ پکار سکنے کا مطلب بچے کا گفتگو کرنے کے عمل میں تاخیر میں شامل ہوتی ہے

اس وجہ سے والدین کے لیۓ یہ بہت ضروری ہے کہ وہ بچے کی کیفیات کا مشاہدہ کر کے اس بات کا فیصلہ کریں کہ درحقیقت بچے کا اصل مسلہ کیا ہے کیون کہ علامات کی بنا پر اکثر یہ دونوں مسائل ایک جیسے ہی محسوس ہوتے ہیں.

⬅️دیر سے بولنے سے کیا مراد ہے؟؟؟

عام طور پر ایک بچہ پیدا ہونے کے کچھ دنوں کے بعد ہی بچہ مختلف قسم کی آوازیں نکالنا شروع کر دیتا ہے ۔ اسکےبعد وہ اکثر آوازیں بھی نکالنا شروع کر دیتا ہے ۔ مگر اس کے ساتھ ساتھ وقت گزرنےکے ساتھ ساتھ بے معنی آوازیں بامعنی لفظوں میں تبدیل ہونا شروع ہو جاتی ہیں ۔ لیکن اگر 2 سال کی عمر تک بچہ اس کوشش میں کامیاب نہ ہو سکے تو یہ اس بات کا ثبوت ہے کہ بچے کو بولنا سیکھنے میں دشواری کا سامنا ہے

⬅️3 سال کی عمر کا بچہ کتنا بول سکتا ہے؟؟؟

ایک تین سال کا بچہ اس عمر تک پہنچتے پہنچتے تقریبا 1000 الفاظ کا استعمال سیکھ چکا ہوتا ہے ۔ اس کے ساتھ ساتھ وہ ماں یا باپ کو اور قریبی رشتوں کو پکار سکتا ہے۔ اس کے علاوہ وہ مختلف اسم ، فعل اور صفات کا استعمال چھوٹے جملوں میں کر سکتا ہے ۔ چھوٹی نظمیں توتلی زبان میں ردھم کے ساتھ پڑھ سکتا ہے

⬅️دیر سے بولنے کی علامات

اگر بچہ بول چال میں تاخیر کا شکار ہو تو ان علامات کا اظہار 2 سال کی عمر سے ہونا شروع ہو جاتا ہے ۔

اگر بچہ دو سال کی عمر تک تقریبا 50 الفاظ نہ بول سکے

ڈھائی سال کی عمرتک چھوٹے جملے نہ بول سکے

تین سال کی عمر تک اس کی بولنے کی صلاحیت 200 الفاظ سے کم ہو اور وہ چیزوں کو ان کے نام سے نہ پکار سکے

اس کے بعد کی عمر میں ایک بار کا یاد کروایا گیا لفظ دوبارہ استعمال نہ کر سکے

تو یہ تمام علامات اس بات کا ثبوت ہیں کہ بچہ دیر سے بولنے کی تکلیف میں مبتلا ہے

⬅️دیر سے بولنے کی وجوہات

◀️زبان میں خرابی

بعض بچوں کی زبان پیدائشی طور پر منہ کے نیچے والے حصے سے اس طرح جڑی ہوتی ہے کہ اس کو حرکت کرنے میں دشواری ہوتی ہے اس صورت میں بہت سارے الفاظ کی ادائگی بچہ نہیں کر سکتا ہے اور اگر کرنے کی کوشش بھی کرتا ہے تو وہ سننے والے کی سمجھ سے بالاتر ہوتا ہے ۔

◀️لفظوں کو بامعنی جملوں میں تبدیل نہ کر سکنا

کچھ بچے وقت کے ساتھ ساتھ الفاظ اور چیزوں کا نام تو سیکھ جاتے ہیں مگر ان کو بوقت ضرورت جملوں کی صورت میں استعمال کرنے کی صلاحیت سے محروم ہوتے ہیں ۔ ایسا عام طور پر ان بچوں کے ساتھ ہوتا ہے جن کی پیدائش قبل از وقت ہوتی ہے یا پھر وہ اعصابی اور دماغی کمزوری میں مبتلاہوتے ہیں.

◀️سماعت کی کمزوری

بولنے کا عمل سننے کے عمل سے جڑا ہوتا ہے کیوں کہ بچہ اسی وقت الفاظ کو سیکھ سکے گا جب کہ وہ ان کو بولنے کے قابل ہو گا ۔اگر پیدائشی طور پر وہ سماعت کے قابل نہ ہوا تو ایسے بچے منہ سے بے معنی آوازيں تو نکال سکتے ہیں لیکن بامعنی الفاظ کو بولنے کی صلاحیت کے حامل نہیں ہوتے ہیں ۔

◀️آٹزم

آٹزم کا شکار بچہ جہاں دوسرے بہت سارے مسائل کا سامنا کرتا ہے وہیں اس کو گفتگو کرنے میں بھی مشکل کا سامنا ہوتا ہے ۔ اور وہ بچے ایک ہی لفظ کو بار بار دہراتے رہتے ہیں لیکن ان کو بامعنی جملوں میں تبدیل کرنے سے محروم ہوتے ہیں

⬅️دیر سے بولنے کا علاج

عام طور پر ایسے بچوں کے علاج کے لیۓ جو تیکنیک استعمال کی جاتی ہے وہ کچھ اس طرح سے ہوتی ہے ۔

◀️اسپیچ لینگوئج تھراپی

یہ وہ طریقہ کار ہے جس کے مطابق بچوں کو بولنے کی مشق ماہر اسپیچ تھراپسٹ کی زیر نگرانی کروائی جاتی ہے ۔

⬅️دیر سے بولنے کی وجوہات کا علاج

اس کے ساتھ ساتھ ان وجوہات کو جن کی بنا پر بچہ دیر سے بول رہا ہے ان کی شناخت کی جاتی ہے اور اس مسئلے کے حل کے لیۓکام کیا جاتا ہے مثال کے طور پر

◀️اگر سماعت کمزور ہے تو اس کے لیۓ ہئيرنگ ایڈ استعمال کیا جاتا ہے اور پھر اسپیچ تھراپی کی جاتی ہے. آلہ سماعت لگوانے کے بعد اسپیچ تھراپی ایک لازمی عمل ہے.

◀️زبان میں ہونے والی تکالیف کا علاج اور ضروری سرجری کروائي جاتی ہے

◀️دماغی کمزوری کی صورت میں اس کے علاج کے لیۓ کوششیں کی جاتی ہیں.

بچوں کے دیر سے بولنے کی صورت میں اسپیچ لینگوئج پیتھالوجسٹ آپ کے لیۓ معاون ثابت ہو سکتے ہیں. مزید معلومات کے لئے دئیے گئے نمبر پر رابطہ کریں.
شکریہ

Advance Speech Therapy Services Pakistan 🇵🇰
Nisar Hospital, Peshawar Road, Rawalpindi
03345322674

24/12/2021

#بچّوں_کی_اچھی_صحت_کیلئے_ماؤں_کا_خوش
#رہنا_ضروری_ہے

کہتے ہیں کہ جب ماں مسکرا کر اپنے بچوں کی جانب دیکھتی ہے تو اُن پر خوشگوار تاثر قائم ہوتا ہے۔ یہ بات تحقیق کے ذریعے ثابت بھی ہوچکی ہے۔ تحقیق کے مطابق، خوش مزاج ماں کے بچے ذہنی طور پر صحت مند ہوتے ہیں۔ اس کا مطلب یہ ہوا کہ ماں کی خوش مزاجی بچوں کی اچھی صحت کی ضامن ہے.

خوش مزاج ماؤں کی بیٹیاں ذہنی طور پر مضبوط ہوتی ہیں۔

ماں کا درجہ سب سے اونچا ہوتا ہے۔ ماں کہنے کو تو تین حروف کا مجموعہ ہے لیکن اپنے اندر کل کائنات سموئے ہوئے ہے۔ ماں وہ ہستی ہے جس کی پیشانی پر نور، آنکھوں میں ٹھنڈک، الفاظ میں محبت، ماں کی آغوش میں دنیا بھر کا سکون، ہاتھوں میں شفقت اور پیروں تلے جنت ہے۔ کہتے ہیں کہ جب ماں مسکرا کر اپنے بچوں کی جانب دیکھتی ہے تو اُن پر خوشگوار تاثر قائم ہوتا ہے۔ یہ بات تحقیق کے ذریعے ثابت بھی ہوچکی ہے۔ تحقیق کے مطابق، خوش مزاج ماں کے بچے ذہنی طور پر صحتمند ہوتے ہیں۔

سائنس کہتی ہے کہ نرم اور خوش مزاج ماں کا بچے کے دل و دماغ پر مثبت اثر پڑتا ہے۔

⬅️ماں کا خوش رہنا زیادہ ضروری:

یو کے کی ’میریج فاؤنڈیشن‘ کی رپورٹ کے مطابق، ماں کی خوشیوں کا براہِ راست اثر بچوں پر پڑتا ہے۔ ۲۰۲۰ء میں تقریباً ۱۳؍ ہزار خاندان پر ہوئی اس تحقیق میں پایا گیا کہ بچوں کی ذہنی صحت کے لئے والد کے خوش رہنے سے زیادہ ضروری ہے ماں کا خوش رہنا۔ والد کی خوشی کی بہ نسبت ماں کا خوش رہنا بچوں کی ذہنی نشوونما پر دگنا اچھا اثر ڈالتا ہے۔ اس تحقیق میں ماں کے خوش رہنے کا براہِ راست اثر اس کی نوعمر بیٹیوں پر نظر آیا۔ وہ ذہنی طور پر مضبوط پائی گئیں۔ اس کے ساتھ ہی اچھے رویے کے والد کا بھی بچوں پر اچھا اثر نظر آیا۔

⬅️غصے کی وجوہات

کئی مرتبہ مائیں تناؤ کی وجہ سے آنے والا سارا غصہ بچے پر نکالتی ہیں۔ اس صورتِ حال میں ماں کی پریشانیوں کا حل نکالا جانا بے حد ضروری ہو جاتا ہے۔

اپنے رشتے، کریئر اور مالی مسائل سے گزر رہی ماؤں کے ساتھ بھی ایسی پریشانیاں ہوتی ہیں۔ ان پریشانیوں کا حل نکالنا ہی واحد طریقہ ہے۔

کئی مرتبہ بچوں کے رویے کو نظرانداز کیا جاتا ہے۔ کچھ بچے بہت ہی غصیلے ہوتے ہیں۔ اس قسم کے بچوں کا مزاج بھی ماں کو سزا دینے کے لئے آمادہ کرتا ہے۔ بچوں کے جارحانہ رویے پر قابو پانے کے لئے ماہرین نفسیات سے مشورہ کیا جا سکتا ہے۔

بیشتر مائیں اپنے کھانے پینے کا خیال نہیں رکھتی اور بگڑتی صحت کی وجہ سے اُن کے مزاج میں چڑچڑاپن شامل ہو جاتا ہے اور ایسے حالات میں وہ اپنا غصہ بچوں پر نکالتی ہیں۔

⬅️مائیں پُرسکون کیسے رہیں؟

کسی بھی وجہ سے شدید غصہ آ رہا ہو تو تھوڑی دیر کے لئے آرام کریں یا تھوڑی دیر سو جائیں۔ اگر یہ ممکن نہیں ہے تو گہری سانسیں لیں۔

لوگ غصہ نکالنے کے لئے کمزور ٹارگیٹ تلاش کرتے ہیں۔ شدید غصہ آ رہا ہے تو اس وقت بچوں کے آس پاس نہ رہیں۔ خود کو کسی اور کام میں مصروف رکھنے کی کوشش کریں۔ اگر کوئی کام بھی سمجھ میں نہ آئے تو کمرے میں ٹہلیں۔
جس کام کو کرنے سے ذہن پُرسکون محسوس کرتا ہے تو اسے کریں جیسے ڈرائنگ، گارڈننگ یا کرافٹنگ وغیرہ۔ آپ کی توانائی اس میں خرچ ہوگی۔ آپ کا من ہلکا ہوگا۔ غصہ آنے کے اسباب سے توجہ ہٹ جائے گی۔صحت بخش غذا کھائیں۔

اگر آپ کو لگتا ہے کہ آپ کا بچہ آپ کے سخت رویے کی وجہ بن رہا ہے، یا اگر آپ کو لگتا ہے کہ آپ بچے پر زیادہ سختی کر رہے ہیں تو آج ہی ماہر نفسیات سے رابطہ کریں.

مزید معلومات کے لئے دئیے گئے نمبر پر رابطہ کریں.
شکریہ

Advance Speech Therapy Services Pakistan 🇵🇰
Nisar Hospital, Peshawar Road, Rawalpindi
03345322674

#بچّوں_کی_اچھی_صحت_کیلئے_ماؤں_کا_خوش
#رہنا_ضروری_ہے

کہتے ہیں کہ جب ماں مسکرا کر اپنے بچوں کی جانب دیکھتی ہے تو اُن پر خوشگوار تاثر قائم ہوتا ہے۔ یہ بات تحقیق کے ذریعے ثابت بھی ہوچکی ہے۔ تحقیق کے مطابق، خوش مزاج ماں کے بچے ذہنی طور پر صحت مند ہوتے ہیں۔ اس کا مطلب یہ ہوا کہ ماں کی خوش مزاجی بچوں کی اچھی صحت کی ضامن ہے.

خوش مزاج ماؤں کی بیٹیاں ذہنی طور پر مضبوط ہوتی ہیں۔

ماں کا درجہ سب سے اونچا ہوتا ہے۔ ماں کہنے کو تو تین حروف کا مجموعہ ہے لیکن اپنے اندر کل کائنات سموئے ہوئے ہے۔ ماں وہ ہستی ہے جس کی پیشانی پر نور، آنکھوں میں ٹھنڈک، الفاظ میں محبت، ماں کی آغوش میں دنیا بھر کا سکون، ہاتھوں میں شفقت اور پیروں تلے جنت ہے۔ کہتے ہیں کہ جب ماں مسکرا کر اپنے بچوں کی جانب دیکھتی ہے تو اُن پر خوشگوار تاثر قائم ہوتا ہے۔ یہ بات تحقیق کے ذریعے ثابت بھی ہوچکی ہے۔ تحقیق کے مطابق، خوش مزاج ماں کے بچے ذہنی طور پر صحتمند ہوتے ہیں۔

سائنس کہتی ہے کہ نرم اور خوش مزاج ماں کا بچے کے دل و دماغ پر مثبت اثر پڑتا ہے۔

⬅️ماں کا خوش رہنا زیادہ ضروری:

یو کے کی ’میریج فاؤنڈیشن‘ کی رپورٹ کے مطابق، ماں کی خوشیوں کا براہِ راست اثر بچوں پر پڑتا ہے۔ ۲۰۲۰ء میں تقریباً ۱۳؍ ہزار خاندان پر ہوئی اس تحقیق میں پایا گیا کہ بچوں کی ذہنی صحت کے لئے والد کے خوش رہنے سے زیادہ ضروری ہے ماں کا خوش رہنا۔ والد کی خوشی کی بہ نسبت ماں کا خوش رہنا بچوں کی ذہنی نشوونما پر دگنا اچھا اثر ڈالتا ہے۔ اس تحقیق میں ماں کے خوش رہنے کا براہِ راست اثر اس کی نوعمر بیٹیوں پر نظر آیا۔ وہ ذہنی طور پر مضبوط پائی گئیں۔ اس کے ساتھ ہی اچھے رویے کے والد کا بھی بچوں پر اچھا اثر نظر آیا۔

⬅️غصے کی وجوہات

کئی مرتبہ مائیں تناؤ کی وجہ سے آنے والا سارا غصہ بچے پر نکالتی ہیں۔ اس صورتِ حال میں ماں کی پریشانیوں کا حل نکالا جانا بے حد ضروری ہو جاتا ہے۔

اپنے رشتے، کریئر اور مالی مسائل سے گزر رہی ماؤں کے ساتھ بھی ایسی پریشانیاں ہوتی ہیں۔ ان پریشانیوں کا حل نکالنا ہی واحد طریقہ ہے۔

کئی مرتبہ بچوں کے رویے کو نظرانداز کیا جاتا ہے۔ کچھ بچے بہت ہی غصیلے ہوتے ہیں۔ اس قسم کے بچوں کا مزاج بھی ماں کو سزا دینے کے لئے آمادہ کرتا ہے۔ بچوں کے جارحانہ رویے پر قابو پانے کے لئے ماہرین نفسیات سے مشورہ کیا جا سکتا ہے۔

بیشتر مائیں اپنے کھانے پینے کا خیال نہیں رکھتی اور بگڑتی صحت کی وجہ سے اُن کے مزاج میں چڑچڑاپن شامل ہو جاتا ہے اور ایسے حالات میں وہ اپنا غصہ بچوں پر نکالتی ہیں۔

⬅️مائیں پُرسکون کیسے رہیں؟

کسی بھی وجہ سے شدید غصہ آ رہا ہو تو تھوڑی دیر کے لئے آرام کریں یا تھوڑی دیر سو جائیں۔ اگر یہ ممکن نہیں ہے تو گہری سانسیں لیں۔

لوگ غصہ نکالنے کے لئے کمزور ٹارگیٹ تلاش کرتے ہیں۔ شدید غصہ آ رہا ہے تو اس وقت بچوں کے آس پاس نہ رہیں۔ خود کو کسی اور کام میں مصروف رکھنے کی کوشش کریں۔ اگر کوئی کام بھی سمجھ میں نہ آئے تو کمرے میں ٹہلیں۔
جس کام کو کرنے سے ذہن پُرسکون محسوس کرتا ہے تو اسے کریں جیسے ڈرائنگ، گارڈننگ یا کرافٹنگ وغیرہ۔ آپ کی توانائی اس میں خرچ ہوگی۔ آپ کا من ہلکا ہوگا۔ غصہ آنے کے اسباب سے توجہ ہٹ جائے گی۔صحت بخش غذا کھائیں۔

اگر آپ کو لگتا ہے کہ آپ کا بچہ آپ کے سخت رویے کی وجہ بن رہا ہے، یا اگر آپ کو لگتا ہے کہ آپ بچے پر زیادہ سختی کر رہے ہیں تو آج ہی ماہر نفسیات سے رابطہ کریں.

مزید معلومات کے لئے دئیے گئے نمبر پر رابطہ کریں.
شکریہ

Advance Speech Therapy Services Pakistan 🇵🇰
Nisar Hospital, Peshawar Road, Rawalpindi
03345322674

Videos (show all)

Eid-ul-Adha 2021
Eid-ul-Adha 2021
Receptive Language & Expressive Language
Speech Therapy Services 🇵🇰
Beautiful Journey of #hijab_zahra_syed
Advance Speech Therapy Services 🇵🇰
Voice Surgery
Preschool Language Scale
#Five #Tongue #Exercises that you can do to get clear #Speech
Happy Independence Day🇵🇰

Location

Telephone

Address


Peshawar Road, Nisar Hospital
Rawalpindi
4545
Other Speech Pathologists in Rawalpindi (show all)
SFRC SFRC
76-B, Street 5, Harley Street,
Rawalpindi, 46000

Providing quality Speech and Language Therapy services to Rawalpindi and Islamabad region.Holistic assessment, management&treatment of speech difficulties

Speech & Language Therapy Clinic Speech & Language Therapy Clinic
Railway Scheme 1, Chaklala
Rawalpindi, 46000

We are a private practice offering speech and language therapy to children who exhibit delays in their communication skills. Speech and language therapy is concerned with the management of disorders of speech, language, communication and swallowing.

Child Centered Teletherapy Services Child Centered Teletherapy Services
Rawalpindi

The Child Centered Teletherapy Services is now providing speech & language services via teletherapy and in person both. We have certified speech-language pathologists on board. services are available to national and international clients.

Speech and language therapist / psychologist/ Special Educator Speech and language therapist / psychologist/ Special Educator
Online Special Education Services
Rawalpindi, 46000

Deal online with problems as Difficulty in producing speech In understanding or using language Hearing, physically impaired,intellectually chalanged