Kauser Homeo Clinic for Female & Children

female diseases & bed wetting, weight loss ,weaknes, skin problems ,rheumotology etc uti, menochesia,menostiosis,leachorea,constipation,piles,weight loss,weakness,birthcontrol,vertigo,headach hypotention ,hypertention,etc

Operating as usual

01/03/2018

Poly Cystic Overy Syndrome (PCOS)
پولی سسٹک اووری سینڈروم

تعریف۔۔۔۔۔۔۔۔۔PCOS وہ مرض ہے جس میں عورتوں کا ایسٹروجن اور پروجیسٹرون ہارمون کا توازن بگڑ جاتا ہے۔ اور خواتین کی بیضہ دانیوں میں سسٹ بننے لگتے ہیں۔ PCOS کی وجہ سے خواتین کے ماہانہ نظام۔ حمل کی صلاحیت۔ دل کے فعل اور ظاہری حسن و جمال پر برے اثرات مرتب ہوتے ہیں۔
اور علاج نہ ہونے کی صورت ذیابیطس۔ امراض قلب اور بے اولادی جیسے گھمبیر مسائل جنم لیتے ہیں۔

ہارمون کیا ہیں۔ اور PCOS میں کیا واقع ہوتاہے۔؟؟؟
ہارمون ہمارے اینڈوکرائین سسٹم سے اخراج پانے والی کیمیائی رطوبات ہیں جو بشمول جسمانی گروتھ اور توانائی پیدا کرنے کے دیگر بہت سے جسمانی عوامل کو چلانے میں کلیدی کردار ادا کرتے ہیں۔ بعض ہارمون دیگر ہارمونز کے اجراء کا باعث بھی ہوتے ہیں۔ سائنسدان ابھی تک ہارمونز کے غیر متوازن ہونے کے اسباب سے کلی آگاھی حاصل نہیں کر پائے۔ ایک ہارمون کی کمی بیشی دوسرے ہارمون کی پیدائش پر اثر انداز ہوتی ہے۔ اور دوسرا ہارمون کسی تیسرے ہارمون کی پیدائش پر اثرانداز ہوتا ہے۔ مثال کے طور پر جنسی ہارمون کا غیر متوازن ہونا اس میں زنانہ بیضہ دانی عموما معمولی مقدار میں مردانہ ہارمون اینڈروجن پیدا کرتی ہے۔ لیکن PCOS میں رفتہ رفتہ اووری سے مردانہ ہارمون کی پیدائش بڑھ جاتی ہے۔ جس کی وجہ سے ہر ماہ بیضوں کا اخراج متاثر ہوتا ہے۔ چہرے پر ایکنی اور جسم پر بالوں کی پیدائش غیر معمولی طور پر بڑھ جاتی ہے۔
جسم میں انسولین کے انجذاب کا مسلہ پیدا ہوسکتا ہے اسے انسولین کی مزاحمت کہا جاتا ہے۔ جب انسولین خلیات میں نہ جذب ہوسکے تو خون میں گلوکوز کی مقدار جمع ہوکر بڑھ جاتی ہے۔ اس طرح ذیابیطس پیدا ہونے کا خطرہ درپیش ہوتا ہے۔

پی سی او ایس کے اسباب۔۔۔۔۔۔۔۔۔
ماہرین ابھی تک PCOS کے اسباب مکمل طور پر نہیں جان پائے مگر اس مرض میں وراثتی خلل Genetic disorder کے شواہد ملے ہیں۔ PCOS کا مرض خاندان میں وراثتا منتقل ہوسکتا ہے اگر کسی خاندان کی دیگر خواتین میں PCOS ۔ ماہانہ نظام کی خرابی۔ یا شوگر پائی جاتی ہے تو اس خاندان کی باقی خواتین کو بھی اس مرض میں مبتلاء ہونے کا خطرہ ہوتا ہے۔ PCOS ماں یا باپ دونوں اطراف سے اولاد میں منتقل ہوسکتا ہے۔

علامات۔۔۔۔۔
اس مرض کی علامات شروع میں کافی ہلکی اور غیر واضح ہوتی ہیں۔ لیکن کچھ خاص علامات سے اس مرض کی پہچان کی جاسکتی ہے۔

1۔ ایکنی۔ چہرے کے سرخ دانے جن میں بعد ازاں پیپ پڑجاتی ہے اور گاہے پیپ خشک ہوکر کیل بن جاتے ہیں۔ ان کو دبانے سے کیلوں کی جگہہ پر سیاہ داغ بھی بن جاتے ہیں۔

2۔ لیکیوریا۔۔۔۔ شروع میں پانی جیسی رطوبت خارج ہوتی ہے لیکن بعد میں یہ رطوبت گاڑھی ہوکر سفید یا زرد رنگ کا جما ہوا بدبودار مواد تھکوں کی صورت بھی اختیار کرلیتا ہے۔

3۔ مینسز کا بگاڑ۔۔۔۔۔۔۔
شروع میں مینسز درد کے ساتھ اور کم آتے ہیں۔ عموما خون سیاھی مائل لوتھڑوں کی صورت آتا ہے۔ رفتہ رفتہ مینسز کم ہوتے جاتے ہیں۔ ان کا درمیانی وقفہ بڑھتا جاتا ہے۔ یعنی سال کے بارہ ماہ میں صرف 9 بار مینسز ہونا۔ پھر یہ وقفہ بڑھتا جاتا ہے اور بالآخر مینسز بند ہوجاتے ہیں۔

4۔ وزن بڑھنا۔۔۔
مینسز کم ہونے کے ساتھ ساتھ عورت کا وزن بڑھنے لگتا ہے۔ جسم میں چربی پیٹ۔ کولہے وغیرہ پر جمنے لگتی ہے۔

5۔ جسم اور چہرے پر غیر ضروری بال آنا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
کچھ خواتین کے چہرے پر موٹے گھنے اور سیاہ بال نکل آتے ہیں۔ جو بڑھتے بڑھتے پیٹ اور پشت پر بھی نمودار ہوجاتے ہیں۔ جبکہ سر کے بال کمزور ہوکر گرنے لگتے ہیں۔

6۔ بےاولادی۔۔۔۔۔۔
مینسز میں بےقائدگی اور اوورین سسٹ کی وجہ سے بیضوں کا اخراج متاثر ہوکر حاملہ ہونے کی صلاحیت کم ہوجاتی ہے۔ لیکن سسٹ کی موجودگی میں بھی پچاس فیصد حمل کے چانس ہوتے ہیں۔

اناٹومی و فزیالوجی
بیضہ دانی Overy۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
ان کی تعداد دو ہوتی ہے۔ اور شکل میں بیضوی بادام جیسی ہوتی ہیں۔ لمبائی ڈیڑھ انچ۔ چوڑائی پونا انچ۔ موٹائی آدھا انچ اور وزن دو سے تین گرام ہے جو سن یاس میں ایک سے ڈیڑھ گرام رہ جاتا ہے۔
یہ گلٹیاں مردوں کے خصیوں سے مشابہہ ہوتی ہیں۔ ان میں ریت کے دانوں کی طرح آپس میں ملے ہوئے بیشمار بلبلے سے پائے جاتے ہیں۔ انہی بلبلوں کے اندر ovam یعنی بیضہ پائے جاتے ہیں۔
جب حیض آنے لگتا ہے تو یہ بلبلے پک کر پھٹتے ہیں اور ان سے بیضہ نکل کر قاذف نالی میں آجاتا ہے۔ اگر وہاں مرد کا سپرم اس بیضہ کو چھید کر اس میں داخل ہوجائے تو حمل قرار پاتا ہے۔ پھر یہی باردار بیضہ رحم میں جاکر اس کی دیواروں کے ساتھ چپک جاتا ہے۔

قاذفین نالیاں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
یہ دو عدد باریک نالیاں ہوتی ہیں۔ جو بیضہ کو اووری سے رحم تک پہچنے کا راستہ فراہم کرتی ہیں۔ انہیں نل یا نلے بھی کہا جاتا ہے۔ ان کی کمبائی 4-6 انچ تک ہوتی ہے۔ قاذف نالی کا اندرونی حصہ بہت تنگ ہوتا ہے۔ گویا بال بھی نہیں گزر سکتا۔ اس کا ایک سرا رحم کی بالائی طرف اور دوسرا صفاق کے جوف پہ کھلتا ہے۔ بالائی حصہ شہنائی کی مانند پھیلا ہوا ہوتا ہے۔ جس کے سرے پر جھالر کی طرح بہت سے زوائد ہوتے ہیں۔ ان کو فیمبریا کہتے ہیں۔ ان زوائد میں سے ایک خصیتہ الرحم سے متصل رہتا ہے۔ یہ اس وقت مبیض کا خاص کر احاطہ کرتا ہے جب بیضہ خصیتہ الرحم سے گر کر اس میں آتا ہے۔

اوورین سسٹ کیا ہے۔۔۔۔۔۔۔۔؟؟؟؟؟
سسٹ بیضہ دانی میں پائی جانے والی پانی کی تھیلیوں کو کہتے ہیں۔ یہ مرض پندرہ سے چالیس سال کی خواتین میں پایا جاتا ہے۔ اووری میں قشری سوزش کی وجہ سے جو اووم انمیچور رہ جاتا ہے۔ وہ وہیں رک جاتا ہے۔ حالانکہ اسے حیض کے ساتھ خارج ہونا چاہیئے تھا۔ یہی فولیکلز سوج ہوکر سسٹ کی صورت اختیار کرجاتے ہیں۔

تشخیص۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
1۔۔ سب سے پہلے ماہانہ ایام کی حالت و کیفیت پوچھی جاتی ہے۔ نیز دیگر امراض کی ہسٹری معلوم کی جاتی ہے۔
2۔ جسمانی معائنہ سے بلڈپریشر معلوم کیا جاتا ہے۔ کیونکہ PCOS کی مریضائیں شروع میں قشری عضلاتی سوزش کی وجہ سے فشار الدم قوی والی ہوتی ہیں۔ انہیں غصہ کافی آتا ہے۔ بلڈ پریشر کی وجہ کولیسٹرول ہوتا ہے۔ لیکن بعد میں ضعف سے ان کی تحریک قشری اعصابی میں بدل جاتی ہے اور غصہ مسلسل نہیں رہتا۔ اس وقت قلب و عضلات میں تحلیل شروع ہوچکی ہوتی ہے۔ کچھ مریضاوں میں PCOS کے باوجود غصہ نہیں ہوتا کیونکہ ان کا بلڈ پریشر کم رہنے لگتا ہے۔
3۔ مریضہ کا قد اور وزن چیک کیا جائے۔ کیوں کہ موٹاپے کا آج کل سب سے بڑا سبب PCOS ہے۔ زیادہ وزن والی مریضہ قشری اعصابی میں چل رہی ہوتی ہے۔ چونکہ قشری اعصابی مریضہ کے عضلات میں ضعف ہوتا ہے۔ اس لیئے انہیں جسمانی دردیں اور پٹھوں میں کھچاو بھی رہتا ہے۔

4۔ مزید علامات جاننے کیلیئے درج زیل ٹیسٹ کروائے جاتے ہیں۔

اول۔۔۔۔ لپڈز پروفائل
اس ٹیسٹ میں کولیسٹرول۔ ٹرائی گلیسرائیڈ۔ HDL. LDL اور VLDL شامل ہیں۔
دوم۔۔۔۔۔LFT
اس میں ALT ALP AST اور سیرم بلیروبن سے جگر کی کیفیت و سوزش اور اینزائمز کی مقدار معلوم ہوتی ہے
سوئم۔۔۔۔۔۔۔RFT
اس ٹیسٹ میں بلڈ یوریا۔ سیرم کریٹینائین۔ اور سیرم یورک ایسڈ کی صورت حال معلوم ہوتی ہے۔
چہارم۔۔۔۔۔ CBC
اگر اندرونی انفیکشنز بن چکے ہوں تو اس ٹیسٹ سے بلڈ سیلز کی مقدار و تعداد معلوم ہوتی ہے۔

5۔ ایبڈومینل الٹراساونڈ۔۔۔۔۔۔۔
اس ٹسٹ میں اندرونی اعضاء گردے کی پتھری کا سائز ۔ گردے کا سائز۔ پتے کی پتھریوں کا پتہ چلتا ہے۔ نیز بیضہ دانی کی سسٹ کی اقسام اور سائز کا علم ہوتا ہے۔ جگر اور طحال کا سائز معلوم ہوتا ہے۔ الغرض یہ ٹیسٹ بہت ضروری اور تشخیص میں معاون ہے۔

6۔ ہارمونل ٹیسٹ۔۔۔
ان ٹیسٹس کے زریعے ہارمونز کے ان بیلینس ہونے کا تخمینہ حاصل ہوتا ہے۔ ان کے مطالعے سے تھائی رائیڈ کے مسائل معلوم ہوتے ہیں۔

7۔ بلڈ شوگر اور انسولین ٹیسٹ۔

علاج میں دوائی اور جراحت کے علاوہ تین بنیادی امور کی پابندی بہت ضروری ہے۔
1۔ باقائدہ ورزش۔۔۔۔۔۔۔
صحت مندانہ سرگرمیوں میں حصہ لیا جائے۔ سحر خیزی۔ پیدل چلنا بہترین عادات ہیں۔

2۔ باپرہیز کھانا۔۔۔۔۔۔۔۔
گوشت ہر قسم۔ چکنائیاں۔ انڈے۔ بیکری آئیٹمز۔ کیفین والی اغذیہ۔ پیزے۔ برگر۔ شوارمے۔ پیپسی۔ کولے۔ چاہے۔ فاسٹ فوڈ۔ مرغنh اغذیہ۔ مرچ مصالحے وغیرہ سے پرہیز ضروری ہے۔ ریض کو اغذیہ معالج کی ہدایت کے مطابق لینی چاہیئیں۔

3۔ وزن پہ قابو رکھنا۔۔۔۔۔۔۔۔۔
چکنائیوں پہ کنٹرول۔ مناسب ورزش وغیرہ سے خود کو سمارٹ رکھنا بہت ضروری ہے۔
4۔ حقہ۔ سگریٹ وغیرہ خواتین میں اینڈروجن ہارمون کا لیول بڑھادیتے ہیں جس کی وجہ سے PCOS تیزی سے بڑھتا ہے۔۔۔

07/08/2017

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ تجرباتcopy from another page صدیقی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

BAPTISIA
*************
بیپٹیشیا
٭٭٭٭٭٭٭
جسم میں بے حد بدبو کے ساتھ ایسا تیز بخار جو تھوڑے ہی عرصے یا چند دنوں میں مہلک صورت اختار کر جائے ۔ تمام اخراج انتہائی بدبودار خصوصا ڈفتھیریا کے مریض میں گلے سے انتہائی بدبو آئے ۔ اور جسم میں دکھن کا بے حد احساس ۔ غنودگی ، مکمل لا پرواہی ، ذہن ماوءف خیال کرے کہ اس کے اعضاء بکھرے پڑے ہیں ۔ اپنے اعضاء کو اکٹھا کرنے کے لیئے کروٹیں بدلے ۔
حاد اور مزمن بخار ۔ بے حد تھکاوٹ اور درد جس طرف لیٹے اسی طرف تکلیف ہو ۔
تمام اخراج انتہائی بدبودار جس کے ساتھ بے حد کمزوری کا احساس ہو ۔ بدبودار پسینہ ۔

14/04/2017

Thanx God 500 + likes

13/12/2016

Timeline Photos

28/10/2016

Timeline Photos

09/09/2016

Timeline Photos

18/01/2016

Health Tips and Secrets- Pakistan ہیلتھ ٹپس اینڈ سکرٹس

* کمرہ میں گہرا سیاہ رنگ کا کپڑا لٹکانے سے مچھر اس کپڑے پر بیٹھ جائیں گے اس طرح آپ مچھروں سے محفوظ رہیں گے۔
* ایک پاو دودھ میں رتی بھر سونٹھ کا پاوڈر ملا کر پینے سے ہچکی کی شکایت ختم ہوجائے گی۔
* روزانہ صبح لہسن کے دو جوئے کھانے سے بی پی اور کولیسٹرال نارمل رہے گا۔
* 100 گرام کری کے پتوں کو 100 ملی لیٹر دودھ میں اس وقت تک اُبالیں جب تک کہ پتے سیاہ نہ ہوجائیں‘ہفتہ میں دو مربتہ اس تیل کو بالوں میں لگائیں اس سے بالوں کی افزائی ہوگی اور بال سفید ہونے کی رفتار سست ہوجائے گی۔
* چھینکیں زیادہ آنے پر ہرا دھنیہ سونگھ لیں چھینکیں بند ہوجائیں گی۔
* عرق کافور کو ناریل کے تیل میں ملا کر بالوں میں لگانے سے جوئیں ہلاک ہوجائیں گی۔
* بدن کی خشکی دور کرنے کیلئے گھی میں تھوڑا نمک ملا کر جسم پر مل لیں اور اس کی اچھی طرح مالش کریں‘ بدن کی خشکی دور ہوجائے گی۔
* روغن ناریل میں لیموں کا رس ملا کر سر کی مالش کریں اس سے سر کے خشکی کی شکایت دُور ہوجائے گی۔
* غسل خانے کی بالٹیاں صاف کرنے کیلئے مٹی کا تیل اور واشنگ سوڈا ملا لیں اور تھوڑی دیر بعد گرم پانی اور سوڈا سے اسے دھولیں ‘بالٹیاں صاف ہوجائیں گی ۔
* جسم کے غیر ضروری بال نکالنے کیلئے ازمودہ نسخہ استعمال کریں شکر میں لیمن جوس اور پانی ملا لیں اس طرح اس کا ویکسس بنالیں اس ویکسس کو غیر ضروری بالوں پر اپلائی کریں۔ ہفتہ میں دو بار لگانے سے غیر ضروری بال ختم ہوجائیں گے۔
* لیدر کے سینڈل تارپین کے تیل سے صاف کرنے سے سینڈل صاف ہوجائے گی۔

04/01/2016

Spine-health

The vast majority of sciatica symptoms result from lower back disorders between the L4 and S1 levels that put pressure on or cause irritation to a lumbar nerve root.

Learn more: http://bit.ly/1NAkBFG

15/12/2015

DawnNews

3 دسمبر۔۔۔معذوروں کا عالمی دن

28/11/2015

Herbalجڑی بوٹیاں

زعفران

ايک چھوٹا سا پودہ ہے جس کي اونچائي 10 سے 30 سانتي‌متر تک ہوتي ہے اور اس کا سائنٹفک نام crocus sativus ہے-

زعفران کے کچھ باريک پتے ہيں، پتوں کے بيچ ميں زعفران کا تنا ہے جس پر پھول بن جاتا ہے ، اور ہر تنے کے اوپر ايک سے تين تک پھول بن جاتے ہيں- زعفران کے پھول وايليٹ ہيں اور ہر پھول کي چھ پھول کي پتيوں کي ہيں- زعفران کے پھولوں کے عمر 3 يا 4 دن ہوتي ہے-

دنيا ميں زعفران کي کھيتی ايشيا کے مختلف علاقوں ميں ہوتي ہے ، خاص طور پر ايشيا کے جنوبي حصے ميں اور يورپ اورسپين کے جنوبي حصے-

نام:

زعفران کے مختلف زبانوں میں مختلف نام ہیں۔ ہندی میں اس کو کیسر کہتے ہیں۔ انگریزی میں اس کا نام سیفرن ہے۔ لاطینی اور یونانی میں اس کو کروکس کہا جاتا ہے۔ بنگلہ میں اس کو جعفران کہتے ہیں۔

مقام پیدائش اور پہچان:
زعفران ایسی اونچی زمین میں بوتے ہیں جہاں پانی بالکل نہیں ٹھہرتا۔ اس کی جڑ آلو کی جڑ کی طرح ہوتی ہے۔ یہ سپین، اٹلی، شام، مصر، کشمیر اور ایران میں پیدا ہوتا ہے۔ زعفران کا درخت چھوٹا، پتے لمبے اور پتلے ہوتے ہیں۔ اس کا پھول نیلے رنگ کا ہوتا ہے جو نومبر دسمبر میں نکلتا ہے۔ اس پھول کے اندر نارنجی رنگ کے ریشے کو زعفران کہتے ہیں۔ جب پھول کھلنے کے قریب ہوتے ہیں تو ان کو بہت تڑکے تاروں کی چھاؤں میں توڑتے ہیں۔ ان کے اندر کے ریشوں کو چن کر سفید کاغذ پر پھیلا کر انہیں حرارت دے کر خشک کر لیتے ہیں۔ اس کے ۳۰ ہزار پھولوں سے ۲۵۰ گرام کے قریب زعفران نکلتی ہے۔

آج کل زعفران کي کھيتی دنيا کے دوسرے علاقوں ميں بھي ہوتي ہے-

ايران ميں زعفران کو خراسان ، يزد، کرمان، گيلان اور مازندران کے صوبوں ميں کشت کي جاتي ہے- ان دنوں ميں زعفران کرج اور قم ميں بھي پيدا کيا جانے لگا ہے- زعفران کے بونے کا کام ايران ميں کافي پرانا ہے - قريب 3000 سالوں سے ايران ميں زعفران کي کھيٹي کي جاتي ہے- زعفران صحرا کے مٹي ميں بويا جاتا ہے اس ليے اسے "لال سونا" يا "صحرا کا سونا' بھي کہاجاتا ہے-

خاص پہچان اور مزاج:
زعفران کو زبان پر رکھیں تو زبان پر تھوڑی سی جلن ہوتی ہے اور زبان سے خوشبو آتی ہے۔ اس کا رنگ زردی مائل سرخ ہوتا ہے۔ اس کے ریشے کے دونوں سرے برابر ہوتے ہیں۔ اس کا سوکھا ہوا ریشہ باریک اور ہلکا ہوتا ہے۔ اس کا مزاج بہت زیادہ گرم نہیں ہوتا۔ یہ دوسرے درجہ میں گرم اور پہلے میں خشک ہے۔

تاريخچہ:

زعفران کھانے کے مزے کو اچھا بنانے اور کپڑوں کو رنگ کرنے کے ليے اور ترقي پذير ممالک ميں صنعت گروں کے ذريعے سے استعمال ہوتا ہے-

عام ثقافت ميں زعفران درد کو کم کرنے اور جنسي طاقت کو بڑھانے کے ليے اورمزيدچين اور سکون کے ليے استعمال ہوتا ہے-

ايشيا کے استوايي علاقوں کے گذشتہ رپورٹوں اور کہانيوں ميں ايک خمير کا نام موجود ہے جو زعفران اور چندن کي لکڑي سے بنايا جاتا ہے - يہ خمير اب ماضي جيسے درد کو کم کرنے اور تسکين دينے کے ليے اورخصوصاً سوکھے کھال کے ليے استعمال ہوتا ہے

زعفران کي کاشت:

زعفران ايک مہنگا پودا ہے جس کي کاشت کرنے کے ليے کسانوں کو زيادہ خرچہ نہيں پڑتا - اگر زعفران کا اچھے سے ہر وقت خيال رکھا جائے تو زعفران کي کھيتي کسانوں کے ليے بہت ہي فائدہ مند ہوتي ہے -

زعفران ايک tropical پودا ہے اور اس کي کھيتي ان علاقوں (جگہوں) ميں کي جاتي ہے جہاں پر نہ زيادہ ٹھندا ہو اور نہ زيادہ گرمي-

ايران ميں زعفران کي کھيتي کي اصل جگہ خراسان کے جنوب کے ريگستاني اور کم آب علاقوں ميں ہے-

آبان سے ارديبہشت تک زعفران کي کاشت ہو جاتي ہے- گرميوں کے آنے سے زعفران کے پتے سکھے اور پيلے ہوجاتے ہيں -

زعفران کي بيج کو کئي علاقوں ميں سات سے دس سالوں تک ايک بار بويا جاتا ہے - ايک بار بونے پر کئي سالوں تک اس کي فصليں خود بہ خود رشد و نمو کرکے تيار ہوجاتي ہيں اور اس کے ليے ہر سال بيج بونے کي ضرورت نہيں ہوتي-

زعفران کو سال ميں دو بار پاني دينے کي ضرورت ہے- ايک بار فصل تيار ہونے سے پہلے اور ايک دفعہ فصل کاٹنے کے وقت -

ايک گرام زعفران قريباً 150 پھولوں کي پتيوں سے حاصل ہوتا ہے-

ايران ميں ہر سال زعفران کي پيداوار 100 ٹن کے قريب ہوتي ہے اور ايران ميں زعفران کي کاشت کرنے ميں پہلي پوزيشن پر ہے - ايران کے بعد زعفران کي سب سے بڑي پيداوار سپين ميں ہوتي ہے اور سپين کے بعد ہندوستان ، روسيہ، سنگاپور، مالزي،جاپان، تايوان، چين، فرنچ، اٹلي،جرمن،آسٹراليا اور يونان تيسري پوزيشن پر ہيں - ان ملکوں ميں ہر سال 25 ٹن زعفران کي پيداوارحاصل ہوتي ہے-

زعفران کا استعمال:

زعفران اکثر ايراني کھانوں ميں استعمال ہوتا ہے - مثلا: زرشک پلاؤ، تہ چين پلاؤ ، جوجہ کباب، سيخ کباب، برياني اور غيرہ-

زعفران کے استعمال کرنے کا طريقہ ايسا ہے کہ زعفران کو پہلے پيستے ہيں اور اس پيسے ہوئے پاؤڈر کو استعمال کرتے ہيں-

زعفران کے پاؤڈر کو ايک برتن ميں ڈال کر اس پر تھوڑا پاني ڈالتے ہيں اور اس برتن ميں موجود زعفران کو پکے ہوئے چاول کے ساتھ ميکس کرتے ہيں ، اسي طرح زعفران کا پورا رنگ نکل جاتا ہے- اس زعفران کو چاول اور باقي کھانوں ميں استعمال کرتے ہيں-

بہتر يہ ہے کہ تھوڑا سا زعفران پيس ليں کيونکہ زعفران کے پاؤڈر لمبے ٹايم ميں نہ صرف اپنے اہم خواص کو کھو ديتا ہے بلکہ اس کے رنگ اور خوشبو ميں بھي تبديلي آتي ہے-

زعفران کو ايسي جگہ ميں رکھنا چاہيے جہاں روشني اور نمي نہ ہو-

زعفران کو پلاسٹک برتنوں ميں نہيں رکھنا چاہيے ، اس کو دھاتي يا گلاس کے برتن ميں رکھتے ہيں - کيونکہ پلاسٹک کے برتن ميں زعفران کو رکھنا اس کي کوالٹي اور خوشبو گھٹ جاتي ہيں-

زعفران کي اہم خوبياں:

زعفران کے استعمال سے کھانا مزے دار بنتا ہے - اس کا استعمال کھانے کے رنگ اور خوشبو کے ليے بھي کيا جاتا ہے- اکثر لوگ پارٹيوں اور عورتوں ميں اس کا استعمال کرتے ہيں-

مڈيسن ميں درد کو کم کرنے کے ليے اور سکوں دينے کے ليے زعفران استعمال ہوتا ہے-

زعفران کے استعمال سےبہت ساري بيماريوں کا علاج بھي ہوتا ہے

زعفران کي چائےکے پينے سے کھانا اچھے سے ہضم ہو جاتا ہے-

زعفران جنسي اور جسماني طاقت کو مزيد بڑھاديتا ہے -

زعفران کے کھانے سے رگوں ميں خون بنايا جاتا ہے اور بہتر طور پر دوڑا جاتا ہے-

زعفران کي سب سے اہم خوبي افسردگي کو دور کرنا ہے - پرانے زمانے سے افسردگي کے علاج کے ليے زعفران کا استعمال ہوتا تھا-زعفران کے اس خوبي کي جھلک بڑے شاعروں کے اشعار ميں موجود رہي ہے-

مُضِرّ اثرات:

حد سے زيادہ زعفران کا استعمال بہت ساري مشکلات اور بيماريوں کا باعث بنتا ہے- اس ليے اس کو مناسب حد تک استعمال کرنا چاہيے-مجموعي طور پر روزانہ زعفران کا 2 گرام استعمال موت کا باعث بھي بن سکتا ہے-

فوائد و منافع:
زعفران طبیعت کو فرحت بخشتی ہے۔
گردہ، مثانہ اور جگر کو قوت اور طاقت پہنچاتی ہے۔
جسم پر ہر طرح کی سوجن اور ریاح کو تحلیل کرتی ہے۔
گردے اور مثانہ کو مواد سے صاف کرتی ہے۔
گردے کے درد کو دور کرتی ہے۔
آنکھ میں پانی ملا کر سلائی ڈالنے سے آنکھ کے درد اور سرخی کو دور کرتی ہے۔
روزانہ رات ایک ایک سلائی آنکھ میں ڈالنے سے نظر کو تیز کرتی ہے۔
جسم میں سردی کی وجہ سے ہونے والے درد اور پسلی کے درد میں فائدہ مند ہے۔
جسم میں اگر مادہ منویہ کم ہو تو اسے پورا کرتی ہے۔
جن خواتین کو حیض رک رک کر آتا ہو یا جن مردوں کے پیشاب میں رکاوٹ ہو اسے جاری کرتی ہے۔
اگر کسی کا پیشاب آنا رک جائے تو اس کے منہ میں اس کا ایک تار رکھ دیں، چند منٹ میں پیشاب جاری ہو جائے گا۔
آنکھ پر اگر گوہانجنی نکلی ہو تو ڈیڑھ رتی زعفران کو ۳ قطرے پانی کے ساتھ پیس کر گوہانجنی پر لگائیں، ان شاء اللہ فائدہ ہو گا۔
جس گھر میں چھپکلیاں بہت زیادہ ہوں وہاں ایک برتن میں تھوڑا سا زعفران کھلا رکھ دیں۔ چھپکلیاں بھاگ جائیں گی۔
اگر کسی مریض کو خارش نے بہت زیادہ تنگ کیا ہو تو پانی میں ۳ ماشہ زعفران گھول کر پلائیں خارش ٹھیک ہو جائے گی۔
تسہیل ولادت کے لیے ساڑھے ۴ ماشہ زعفران پلانے سے بچہ فوراً پیدا ہو جاتا ہے۔

نسخہ تسہیلِ ولادت:
زعفران، عنبر، جدوار تینوں اشیا ہم وزن لے کر دانہ ماش کے برابر گولیاں بنا لیں۔ وضع حمل سے ۲ ہفتے قبل ۴ گولیاں صبح نہار منہ اور ۳ گولیاں شام دودھ سے دیں۔ جس روز وضع حمل کی امید ہو اس روز ۵ گولیاں صبح کے وقت اکٹھی اور بعد از وضع حمل ۱۰ گولیاں دیں۔ بچہ آسانی سے پیدا ہو گا اور زچہ بھی کمزور نہ ہو گی۔

نسخہ برائے نیند:
جن لوگوں کی نیند اچاٹ ہو گئی ہو اور انہیں کسی بھی صورت نیند نہ آتی ہو، زعفران، افیون اور تج تینوں ہم وزن لے کر کل روغن میں پیس کر منہ اور چہرے پر مل دیا جائے تو فوراً نیند آ جائے گی۔

آج کا ریٹ: تقریباً ۲ لاکھ روپے کلو

***********************************************************
مزید دلچسپ , دیسی نسخہ جات،جنسی و جسمانی بیماریاں،علاج , جڑی بوٹیوں کے فوائد , خوبصورت واقعات , بہترین تحریروں اورسبق آ موز posts کے لئے ہمارا پیج لاٗیک کیجئے.اپنے دوستوں کو بھی شیئر کریں... شکریہ
****************************************************
آج ہی لائیک کیجئے _
WWW.desiherbal.com
WWW.Facebook.com/desiherbal
www.facebook.com/groups/desiherbal
طالب دعاء حکیم عمران کمبوہ۔۔و۔۔۔ عرفان حیدر بٹ
www.facebook.com/irfan.butt.505

24/09/2015

Eid Mubarak sbko

28/04/2015

Health Tips and Secrets- Pakistan ہیلتھ ٹپس اینڈ سکرٹس

کوار گندل یعنی ایلوویرا قدرت کا ایک انمول تحفہ ہے جس کا ذکر قدیم مصری تحریروں میں بھی ملتا ہے۔ کوار گندل کے پتوں کی جیل یا لیس میں 20منرلز، 12وٹامنز، 18امینوایسڈ، 75نیوٹرنٹس اور 200طرح کے اینزائمز ہوتے ہیں۔ اپنی انہیں خصوصیات کے باعث کوار گندل بے پناہ طبی فوائد کا حامل ہے جن میں سے کچھ درج ذیل ہیں ۔
جلدی صحت
یونیورسٹی آف میرے لینڈ میڈیکل سنٹر کے مطابق ایلوویرا جلدی صحت کے لئے نہایت اہمیت کا حامل ہے۔ کوار گندل کی جیل کو بطور کریم استعمال کرکے جلد کو نرم و ملائم اور خوبصورت بنایا جا سکتا ہے۔ اس کے علاوہ جلد پر دانوں کے نشانات مٹانے اور جلد جلنے کی صورت میں بھی ایلوویرا کا استعمال نہایت موثر ہے۔
جوڑوں کا درد
وہ لوگ جو جوڑوں کے درد میں مبتلا رہتے ہیں، انہیں ایلوویرا کا باقاعدگی سے استعمال کرنا چاہیے۔
کینسر
سائنسی تحقیق نے یہ ثابت کیا ہے کہ کوار گندل میں موجود اجزاءٹیومر کو بڑھنے نہیں دیتے، اسی لئے ماہرین طب کینسر کے مریضون کو بطورخاص کوار گندل کے استعمال کی ہدایت کرتے ہیں۔
منرلز اور وٹامنز سے بھرپور
ایلوویرا وٹامن اے، سی، ای، بی ون، بی ٹو، بی تھری، بی سکس، فولک ایسڈ اور کہولین سے بھرپور ہوتا ہے۔ ایلوویرا کا شمار ان چند پودوں میں ہوتا ہے، جن میں وٹامن بی 12 پایا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ کوار گندل میں میگنیز، کوپر، پوٹاشیم، آئرن، سوڈیم، سیلینیم، زنک اور کیلشیم بھی کثیر تعداد میں پایا جاتا ہے۔
بلڈپریشر
ایلوویرا کا باقاعدہ استعمال جسم کو فربہ نہیں ہونے دیتا اور نتیجتاً جسم میں بلڈ پریشر کی سطح معتدل رہتی ہے۔ متعدد تحقیقات نے یہ ثابت کیا ہے کہ کوار گندل کی جیل کا جوس بلڈ پریشر کو بڑھنے نہیں دیتا۔
منہ کے چھالے
ایلوویرا کی جیل منہ میں بننے والے چھالوں کا بہترین علاج ہے، یہ نہ صرف چھالوں کی وجہ سے ہونے والی تکلیف کو رفع کرتی ہے بلکہ ان چھالوں کو بھی جلد ختم کر دیتی ہے۔
اینٹی آکسیڈینٹ صلاحیت
ایلوویرا جیل اور اس کا جوس بہترین اینٹی آکسیڈینٹ صلاحیت رکھتا ہے، جو مختلف بیکٹیریا کے خلاف بھرپور مزاحم کا کردار ادا کرتا ہے۔
جسمانی تیزابیت
مختلف کیمیکلز اور سپرے سے پیدا ہونے والی سبزیاں جسم میں تیزابیت کی مقدار کو بڑھا دیتی ہیں، جو ہمارے لئے نہایت نقصان دہ ہے، لیکن پریشان ہونے کی بات نہیں جسمانی تیزابیت کو متوازن رکھنے کے لئے باقاعدگی سے ایلوویرا کا استعمال کریں۔
صاف ہوا
فضائی آلودگی آج ہمارے شہروں کو بہت بڑا مسئلہ بن چکی ہے۔ بڑھتی آلودگی سے ہر بندہ پریشان ہے کیوں کہ صاف ہوا نہ ملنے کے باعث ہم متعدد امراض میں مبتلا ہو رہے ہیں۔ تو ان حالات میں اپنے گھروں، دفاتر اور کھلی مقامات پر ایلوویرا کے پودے ضرور لگائیں کیوں کہ یہ ہوا کی صفائی کا کام کرتے ہیں۔

27/04/2015

Health Tips and Secrets- Pakistan ہیلتھ ٹپس اینڈ سکرٹس

بری لت یا عادت انسان کے لئے ہمیشہ نقصان دہ ثابت ہوئی ہے اور کسی بھی قسم کے نشہ کی لت انسان کو تباہ کرکے رکھ دیتی ہے۔ ماہرین کے مطابق بری عادات دھیرے دھیرے اِس کی جسمانی، نفسیاتی اور روحانی صحت کو متاثر کر دیتی ہےں۔ نشہ کی لت کے باعث ہونے والی جسمانی و نفسیاتی کے نقصان کے ازالہ کے لئے قدرتی ادویات درج ذیل ہیں ۔
جگر اور نظام انہضام کی بہتری
وٹامن سی
وٹامن سی کو نشہ کے علاج کے لئے بنیاد نیوٹرنٹس تصور کیا جاتا ہے۔ یہ انسانی جسم سے زہر کو نکالنے کےساتھ مضر علامات کو بھی کم کرتا ہے۔
سیلینیم
سیلینیم ایسا اینٹی ٹاکسیڈینٹ جو انسانی جسم میں آکسیجن کے استعمال کو بہتر بناتا ہے۔ ایک تحقیق کے مطابق سیلینیم رکھنے والے چوہے آکسیجن کے بغیر بہت دیر تک زندہ رہتے ہیں۔ لہٰذا سیلینیم کی انسانی جسم میں موجودگی نہ صرف نشہ کی وجہ سے متاثر ہونے والے جگر کے نظام کو بہتر بناتی ہے بلکہ یہ کینسر اور دل کے امراض کے خدشات کو بھی کر دیتی ہے۔
زنک
زنک نظام استحالہ یعنی میٹابولزم کو کاربوہائیڈریٹ کرنے میں نہایت اہم کردار ادا کرتا ہے۔ شوگر، کیفین، نشہ آور ادویات اور الکوحل کا حد سے زیادہ استعمال کرنے والے افراد میں اکثر زنک کی کمی واقع ہو جاتی ہے اور زنک کی کمی جگر کی فعالیت اور قوت مدافعت کے نظام پر منفی اثرات مرتب کرتی ہے۔
کرومیم
کرومیم نشہ سے چھٹکارا میں معاون ثابت ہو سکتی ہے، یہ جسم میں خون کی شوگر کی سطح کو متوازن رکھتی ہے۔
ایسڈوفیلوس
ایسڈوفیلوس جسم میں فلورا نامی بے ضرر جراثیم پیدا کرتا ہے، جو خوراک کو ہضم ہونے میں مدد فراہم کرتا ہے۔
اعصابی نظام کی مضبوطی
کیلشیم
کیفین، شوگر، نشہ آور ادویات اور الکوحل کے استعمال کی کثرت کے باعث انسانی جسم میں کیلشیم کی کمی واقع ہو جاتی ہے، اور کیلشیم کی کمی اعصابی نظام کو کمزور کردیتی ہے۔ لہذا بری عادات کا شکار افراد کے لئے کیلشیم کا حصول نہایت ضروری ہے۔
میگنشیم
میگنشیم اور کیلشیم وہ دو اتحادی ہیں، جن کی جسم میں موجودگی اعصابی نظام کو نہ صرف صحت مند بلکہ مضبوط بھی بناتی ہے۔
توانائی میں اضافہ
بی کمپلیکس
شوگر، کیفین، الکوحل اور نشہ آور ادویات استعمال کرنے والے افراد میں اکثر بی وٹامنز کی کمی ہو جاتی ہے، اور بی وٹامنز کی کمی نفسیاتی مسائل پیدا کر دیتی ہے، لہٰذا 20سے 25گرام وٹامن بی روزانہ دو سے تین بار ضرور استعمال کریں۔
پوٹاشیم
آج کل انسانی جسم میں پوٹاشیم کی سطح میں کمی عام نقص ہے۔ نمک، کیفین، الکوحل، شوگر کا حد سے زیادہ استعمال اور خوراک میں عدم توازن پوٹاشیم کی کمی کی بڑی وجوہات ہیں۔ پوٹاشیم کی جسم میں کمی سے ڈپریشن کا مرض لاحق ہو سکتا ہے، لہٰذا پوٹاشیم کی کمی دور کرنے کے لئے مالٹے، کیلا اور تازہ سبزیوں کا استعمال کیا جائے۔

Location

Category

Website

Address


Rawalpindi
43600

Opening Hours

Monday 11:00 - 17:00
Tuesday 11:00 - 17:00
Wednesday 11:00 - 17:00
Thursday 11:00 - 17:00
Friday 11:00 - 17:00
Saturday 11:00 - 17:00

Other Doctors in Rawalpindi (show all)
Dr Pirzada Wajid Hussain Shah Dr Pirzada Wajid Hussain Shah
Roots Pakistan
Rawalpindi, 46000

Former WTO Chief, Senior Scientist, Researcher, Consultant and Vet. Surgeon

SehatAbad SehatAbad
Sehatabad Medical Center,Chairman House,Dhoke Darzian Road,Dhoke Hassu
Rawalpindi, 46000

Doctor,Occasional Writer, Philanthropist

DR. M ZAFAR IQBAL DR. M ZAFAR IQBAL
Rawalpindi

HOMOEOPATHIC IS A SAFE AND FREE OF SIDE EFFECTS IT'S TREAT IN FRIENDLY WAY AND CAN REMOVES STONES WITH OUT OPERATION IT'S TREAT GOUT GENRAL MUSCULAR AND MALE FEMALE 100% SUCESSFULLY. WE ARE LOOKING FORWARD TO GIVE PEOPLS POSSITIVE SERVICES.

Dr. Moiz, Physical Therapist, Chiropractor Dr. Moiz, Physical Therapist, Chiropractor
Premium Diagnostics 2, The Mall, Saddar, Rawalpindi,
Rawalpindi, 46000

Qualified Physiotherapist/Chiropractor in Rawalpindi with extensive experience of diagnosing and tre

Dr Saud Majid - Plastic Surgeon Dr Saud Majid - Plastic Surgeon
Medics Clinics & Diagnostic Center, Bhakral Plaza, Opposite AFIC, Saddar.
Rawalpindi

A certified plastic and cosmetic surgeon, experienced in aesthetics, reconstruction, burns, hand sur

Maan Jee Memorial Clinic - ماں جی میموریل کلینک Maan Jee Memorial Clinic - ماں جی میموریل کلینک
Maan Ji Memorial Clinic, Street#6, Al Ghani Market, Sector#3, Airport Housing So
Rawalpindi, 56000

Maan Ji Memorial Clinic is a clinic. That aims to provide a checkup facility and basic medical facil

Baqai Dawakhana & Homoeo Clinic Baqai Dawakhana & Homoeo Clinic
Talwaran Bazar Rd, Talwaran Bazar,Rawalpindi 46000, Pakistan
Rawalpindi

Health

PhysioWorks by StayFit PhysioWorks by StayFit
Khidmat Medical Center, Service Road East, Near Islamabad Expressway, Ghouri To
Rawalpindi, 44000

We are determined to provide best possible treatment to all your Muscular and spinal problems with combined approach of chiropractic/Manipulative therapy, physical Therapy and Fitness Training all at one place...

Dr Syed Rashid Ali Dr Syed Rashid Ali
Rawalpindi, 46000

I am a qualified homoeopathic consultant practicing for last 16 years .Alhamd u Lillah a large no

Khawaja Veterinary Clinic & Live Stock Services Khawaja Veterinary Clinic & Live Stock Services
Rawalpindi, 46000

Veterinarians serve the healthcare needs of animals, including small animals, livestock, avian, and zoo and laboratory animals.

Hakeemdoctorghulamshabbir Hakeemdoctorghulamshabbir
Dawakhana Hakeem Tehseen H-8/A First Floor Liquat Bagh Murree Road Rawalpindi Mo
Rawalpindi, 46000

hakeemdoctorghulamshabbir F.T.j,R.U.M.P,(PK) D.H.M.S,R.H.M.P B.U.M.S NCT # QH-30155-A PHC # R-03767 N.C.H #144316 CELL # 0301-5318331 WHATSAPP # 03015318331

Dr Bashir Ahmad Dr Bashir Ahmad
Rawalpindi, 46000

Fuji foundation hospital Rawalpindi