Shaikh Specialist Clinic

Shaikh Clinic is place where people are coming for their day to day check up. Dr. Ilyas Shaikh is

Operating as usual

19/10/2022

ڈاکٹر محمد الیاس شیخ کل بروز جمعرات 20 اکتوبر 2022 سے روزانہ گلشن ملیر نزد ناصرہ اسکول،ہنسا آباد ملیر میں صبح 11 تا دوپہر 1 بجے تک کلنیک شروع کر رہے ہیں۔
یہاں امراض سینہ و عام امراض کا مشورہ کلینک ہوگا۔
شکریہ

01/10/2022

Shaikh Specialist Clinic: From 03.10.22, the timings will be 7 pm to 9:30 pm.

29/08/2022

السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ
ہانسوٹی ویلفئیر سوسائٹی نے اپنی روایت کے مطابق ہر ماہ کی طرح آج بروز اتوار 28 اگست 2022 کو کمیونٹی ہال میں فری میڈیکل کلینک کا انعقاد کیا۔منتظمین عبد الغنی،زبیر ،نجم الدین اور شجاع نے دیگر دوستوں کی مدد سے مریضوں کی رہنمائ کی اور ڈاکٹر محمد الیاس شیخ نے مریضوں کا معائینہ کیا اور علاج تجویز کیا۔علاقے کے مریضوں کے لئے تجربہ کار ماہر امراض سینہ اور جنرل میڈیکل امراض کے ماہر نے امراض سینہ اور دیگر امراض مثلاً ذیابیطس،بلند فشار خون،امراض معدہ ،جوڑوں کی تکلیف کاعلاج تجویز کیا ۔
امید ہے یہ سلسلہ مریضوں کے لئے مزید فائیدہ مند ثابت ہوتا رہے گا۔ان شاء اللہ

29/08/2022

Floods In Pakistan 2022 - Medical Support Message - Public Medical Service Message

A for .
سیلاب زدگان کی فوری طبی امداد کے مشورے
Please do listen and share it with others. Spread the word 📢



Pakistan Red Crescent
JDC Foundation Pakistan Alkhidmat Foundation Pakistan Al Khidmat Foundation Khyber Pakhtunkhwa Al Khidmat Foundation Khyber Pakhtunkhwa Al-Khidmat foundation Sub Office Karachi National Institutes of Health Pakistan

09/08/2022

9th of August 2022

09/07/2022

to Muslims all around the world!!

01/07/2022

السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ

شیخ سپیشلسٹ کلینک 7 جولائ 2022 سے 17 جولائ 2022 تک عید الاضحی کی وجہ سے بند رہے گا۔براہ کرم نوٹ فرمالیں۔

اللہ آپ سب کو صحت اور خوشیوں کے ساتھ رکھے۔امین

28/06/2022

السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ ۔
میڈیکل سائنس تشخیص و علاج کا ہی عمل نہیں۔یہ ایک سوشیل سائنس بھی ہے۔تیزی سے ترقی کرتی ہوئی ٹیکنالوجی نے شعبئہ میڈیکل کو انتہائی تیز ترین کر دیا ہے۔جو تحقیق صبح امریکہ ،کینیڈا،برطانیہ اور دوسرے ترقی یافتہ ممالک میں ہوتی ہے وہ تیزی سے سفر کرکے شام میں دنیا کے ہر گوشے میں طلوع ہو جاتی ہے۔جو ڈاکٹر طبی معلومات کا حصول جاری رکھتے ہیں وہ امراض کا بہتر علاج کر سکتے ہیں۔پاکستان کے ڈاکٹرز ہر شعبے میں بہتر خدمات انجام دیتے ہیں۔سعودی عرب اور دیگر ممالک میں پاکستانی ڈاکٹرز کو قدر کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے۔ایک طرف تیزی سے ترقی کرتی ہوئی سائنس اور دوسری طرف انسان کا انسان سے فاصلہ دور ہوا جارہا ہے۔پاکستان دنیا بھر میں معیشت کے بحران سےزیادہ متاثر ہونے والے ممالک میں سے ایک ہے۔کمیونٹی کے ساتھ عرصہ 20 سال کام کیا اور پرائمری کئیر خدمات انجام دی اور اب سعودیہ سے واپس آکر دوبارہ کلینک شروع کیا ہے۔میڈیکل کیمپ ایک خدمت ہے۔دو کیمپ ہو چکے ہیں۔ھائ بلڈ پریشر،زیابیطس،امراض سینہ اور عام امراض کے بارے میں علاج تجویز کیا گیا۔۔ہڈیوں کی بھربھراہٹ ایک عام مرض بن چکا ہے۔خواتین کے علاؤہ مردوں میں بھی وٹامن ڈی کی کمی پائ۔
کچھ وقت دھوپ میں گزاریں۔سبزیوں اور پھلوں کو مناسب استعمال ہونا چاہیے۔مثبت انداز فکر رکھیں۔صحت اللہ کریم کی بیش بہا نعمت ہے۔اپنے آپ کو کسی علت میں مبتلا نہ کریں۔
پانی کی کمی بڑھتی جارہی ہے۔ابادی بے تحاشا۔کراچی فراخ دل شہر ہے۔ملک بھر سے وطن کے لوگ آتے ہیں۔فضائ آلودگی ایک مسئلہ ۔بیماریاں بدنی ہو یا ذہنی بڑھتی جاتی ہیں۔ہانسوٹی کمیونٹی مدرسہ کے منتظمین تندہئ،خلوص اور مشنری جزبے سے کام کرنا چاہتے ہیں۔انہیں نہ صلہ کی اور نہ ستائش کی تمنا ہے۔امید ہے اور رضاکار آگے ا کر عبد الغنی اور ان کی ٹیم کا ساتھ دیں گے۔اللہ آپ سب کو صحت اور خوشیوں کے ساتھ رکھے۔امین یا رب العالمین

12/06/2022

Public awareness for Healthy women.

طبی ماہرین کے مطابق بچے کی پیدائش ایک زندگی بدل دینے والا تجربہ ہے، بچے کی پیدائش کے وقت عورت جسمانی اور ذہنی طور پرایک مشکل مرحلے سے گزرتی ہے۔ اور پیدائش کے بعد اس نئے تعلق کو سمجھنے (ذہنی اور جذباتی طور پر) اور اس کے ساتھ ایڈجسٹ ہونے کے لیے خواتین کو وقت، ہمدردی اور سپورٹ سسٹم کی ضرورت ہوتی ہے۔

جہاں پاکستان کے اکثر دیہات میں آج بھی خواتین بچہ پیدا کرنے کے 40 دن تک کمرے میں بند بستر پر وقت گزارتی ہیں (کئی علاقوں میں اسے ’چھلہ‘ بھی کہا جاتا ہے) اور اس دوران ماں کے کسی قسم کی ورزش سے لے کر نہ نہانے تک کا رواج ہے، وہیں دوسری جانب دنیا کے بیشتر ممالک میں خواتین بچے کی پیدائش کے دو سے چار ہفتوں کے دوران اپنے زندگی کے معمول پر واپس آ جاتی ہیں اور روزمرہ کام کاج کا آغاز کر دیتی ہیں۔

طبی ماہرین کے مطابق خواتین کا حاملہ ہونا ایک قدرتی عمل ہے اور بچہ پیدا کرنے کا مطلب یہ ہرگز نہیں کہ عورت صرف بستر پر رہ کر مستقل آرام کرے۔
انھی سوالات کے جوابات کے لیے بی بی سی نے طبی ماہرین ذچہ و بچہ (گائناکالوجسٹس) سے بات کی ہے۔
پہلی قسم نارمل ڈیلیوری ہے۔ ڈاکٹر سلمہ کے مطابق کسی پیچیدگی اور آپریشن کے بغیر ہونے والی ’نارمل ڈیلیوری‘ کے بعد عموماً خواتین کو کسی قسم کے طبی مسائل کا سامنا نہیں کرنا پڑتا، مگر اس کا یہ مطلب نہیں کہ بچہ پیدا کرنے کے بعد وہ بس اٹھ کر کام کاج شروع کر دے۔

وہ کہتی ہیں کہ نارمل ڈیلیوری کے ذریعے بچہ پیدا کرنے کے کم از کم ایک ہفتے تک ماں کے آرام اور خوراک کا اسی طرح خیال رکھنا چاہیے جس طرح دورانِ حمل رکھا جا رہا تھا تاکہ وہ بچے کو اپنا دودھ پلانے کے ساتھ ساتھ دوبارہ تندرست ہو کر نارمل روٹین کی طرف واپس آ سکے۔

ڈاکٹر سلمہ کفیل کا کہنا ہے کہ عورت نو ماہ تک بچے کو اپنے جسم میں رکھتی ہے، پھر اسے پیدا کرتی ہے، اس کے جسم کو واپس اپنی جگہ پر آنے اور نئی حقیقت کو ذہنی طور پر قبول کرنے کے لیے آرام، مناسب خوراک اور دیکھ بھال کی ضرورت ہوتی ہے لہذا پیدائش کے فوراً بعد ہی اسے کام کاج پر لگا دینا ’بہت ظلم‘ ہے۔

تاہم ساتھ ہی وہ یہ بھی کہتی ہیں کہ اس کا
مطلب یہ ہرگز نہیں کہ آپ سارا وقت بستر پر لیٹے رہیں بلکہ اٹھ کر چہل قدمی کی کوشش کریں۔
ایپیسیٹومی (episiotomy) ڈیلیوری یا چھوٹا آپریشن:
بچے کی پیدائش کی دوسری قسم ایپیسیٹومی (episiotomy) ڈیلیوری یا چھوٹا آپریشن ہے۔ ڈاکٹر سلمہ کے مطابق بعض خواتین میں اندام نہانی تنگ ہونے کے باعث بچے کی پیدائش میں مشکلات ہوتی ہیں جس کے لیے متعلقہ جگہ پر چیرا دے کر بچے کی پیدائش کے عمل کو آسان بنایا جاتا ہے اور بعدازاں وہاں ٹانکے لگائے جاتے ہیں۔ اس عمل کو ایپیسیٹومی کہا جاتا ہے۔

ڈاکٹر سلمہ کفیل کے مطابق اگر یہ عمل جراثیموں سے پاک ماہر ڈاکٹر کی نگرانی میں کیا جائے تو خواتین کو کم پیچیدگیوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے اور اس کے بعد انفیکشن وغیرہ کے خطرات بھی کم ہوتے ہیں مگر یہ ایک تکلیف دہ عمل ہے اور episiotomy سے بچے کی پیدائش کے بعد ماں کو دوائیوں کے ساتھ ساتھ کم از کم 10 دن تک آرام، مناسب دیکھ بھال اور خوراک کی ضرورت ہوتی ہے۔
Forceps ڈیلیوری:
تیسری قسم فورسیپس ڈیلیوری ہے جسے انسٹرومینٹل یا اسسٹڈ ڈیلیوری بھی کہا جاتا ہے جس کے دوران Forceps (ایک دھاتی آلہ) یا کسی اور آلے کے ذریعے بچے کے سر کو برتھ کینال سے باہر نکالا جاتا ہے۔

ڈاکٹر سلمہ کفیل کے مطابق یہ ایک پیچیدہ ڈیلیوری ہوتی ہے جس میں ماں کو Forceps لگانے کی ضرورت پڑتی ہے جو برتھ کینال میں مزید تکلیف کا باعث بنتا ہے جس کے بعد ماں کو آرام کرنا چاہیے اور اس کا انحصار اس بات پر ہے کہ اس ڈیلیوری کے دوران اسے جسمانی طور پر کتنا نقصان پہنچا ہے۔

وہ کہتی ہیں کہ اس ٹراما سے صحت یاب ہو کر کے نارمل ہونے کے لیے ماں کو کم از کم تین ہفتے آرام اور دیکھ بھال کی ضرورت ہے۔
سی سیکشن ڈیلیوری یا بڑا آپریشن:

چوتھی قسم میں ماں کے پیٹ کو کاٹ کر بچہ باہر نکالا جاتا ہے اور اگر یہ آپریشن ماہر گائناکالوجسٹ کی نگرانی میں صاف ستھرے ماحول میں کیا جائے تو عورتوں کو پیچیدگیوں کا سامنا نہیں کرنا پڑتا ہے مگر یہ ایک تکلیف دہ سرجری ہے اور سی سیکشن سے گزرنے والی خواتین کو زیادہ دیکھ بھال کی ضرورت ہوتی ہے۔

ڈاکٹر سلمہ کے مطابق ایسی ماؤں کو چھ ہفتوں تک آرام، مناسب خوراک اور وقت پر دوائی کی ضرورت ہوتی ہے اور اس سب کے ساتھ ساتھ انھیں خاندان کی جانب سے بہتر دیکھ بھال اور سپورٹ سسٹم ک’انھیں اٹھا کر واک کروائیں‘ میں نے حیران ہو کر پوچھا کہ اسے تو ابھی ٹانکے لگے ہیں اور بہت درد بھی ہے۔ جس پر ڈاکٹر نے بتایا کہ اگر یہ ابھی اٹھ کر چلیں گی نہیں تو بعد میں مسائل کا سامنا کرنا پڑے گا۔

اس حوالے سے ڈاکٹر سلمہ کہتی ہیں کہ سی سیکشن کے دوسرے دن ماؤں کو اٹھا کر ورزش کا مشورہ اس لیے دیا جاتا ہے تاکہ ان کے ان کے جسم میں بلڈ کلاٹ (خون جمنا) نہ بنیں جو خواتین کی صحت کے لیے بہت خطرناک ثابت ہوتے ہیں۔ی بھی ضرورت پڑتی ہے۔
پاکستان کے اکثر دیہات میں آج بھی خواتین بچہ پیدا کرنے کے 40 دن تک کمرے سے نہیں نکلتیں جسے عرفِ عام میں ’چھلہ‘ بھی کہا جاتا ہے۔

خواتین کے بچہ پیدا کرنے کے چالیس دن تک ’چھلہ‘ میں رہنے کے متعلق ڈاکٹر سلمہ کا کہنا ہے کہ یہ اچھی بات ہے کہ ماں آرام کر رہی ہے، لیکن اگر بچے کی پیدائش کے وقت اسے ٹانکے نہیں لگے یا وہ پیچیدہ آپریشن سے نہیں گزری تو 40 دن بغیر کسی ورزش کے بستر پر پڑے رہنا اور خود کو الگ تھلگ کر لینا ایک سماجی مسئلہ بننے کے ساتھ ساتھ صحت کے خطرات کا باعث بھی بن سکتا ہے۔

بغیر کسی پیچیدگی کے بچہ پیدا کرنے والی خواتین کے لیے ان کا مشورہ ہے کہ سات دن بعد اٹھ کر کام کاج شروع کریں۔
طبی ماہرین کا ماننا ہے کہ بچے کی پیدائش کے بعد خواتین کو آرام اور مناسب خواراک کے ساتھ ساتھ دیکھ بھال اور سپورٹ کی ضرورت اس لیے بھی ہوتی ہے تاکہ وہ پوسٹ پارٹم جیسی بیماری کا شکار نہ ہو سکیں۔

پوسٹ پارٹم ڈپریشن ایک ایسی بیماری ہے جس کا دورانیہ ہر خاتون میں مختلف ہوتا ہے۔ اس ڈپریشن میں عورت اپنے پیدا ہونے والے بچے کی خوشی منانے یا اس وقت سے لطف اندوز ہونے کے بجائے الٹا اداسی اور دکھ کی کیفیت میں چلی جاتی ہے۔

ماہرین کے مطابق عموماً خواتین کو بچے کی پیدائش کے بعد پہلے چھ ہفتے میں پوسٹ پارٹم ڈپریشن کا سامنا ہو سکتا ہے تاہم اگر کبھی یہ شدت اختیار کر لے تو یہ ڈپریشن لمبا بھی ہو جاتا ہے۔

پوسٹ پارٹم ڈپریشن کی وجوہات کے متعلق ماہرین کا کہنا ہے کہ بچے کی پیدائش کے بعد خواتین کے جسم میں ہونے والی تبدیلیاں تو شامل ہیں ہی لیکن اس کے ساتھ ساتھ کچھ سماجی وجوہات بھی اس کا مؤجب بن سکتی ہیں مثلاً دوران حمل شوہر اور سسرال والوں کی طرف سے خواتین کا خیال نہ رکھا جائے اور شوہر سے وابستہ توقعات پوری نہ ہوں تو ایسی خواتین کے پوسٹ پارٹم ڈپریشن کا شکار ہونے کا خطرہ زیادہ ہوتا ہے۔

02/05/2022

Eid Mubarak! ✨ Wishing peace, prosperity and happiness to all of you and your family members 🤍
Have a blessed and health-full Eid!

02/05/2022

السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ
شیخ اسپیشلسٹ کلینک کی طرف سے عید مبارک
۔اللہ تعالئ آپ کی رمضان کی عبادات کو قبول فرمائے۔
کلینک آج رات ساڑھے 7 تا 9:30 بجے کھلا ہوگا
عید تعطیل منگل تا جمعرات ہوں گی۔
جمعہ سے کلینک کے اوقات حسب ذیل ہوں گے-
7.30-10 P.M

02/04/2022

🌙

01/04/2022

Ramadan and chest diseases

Watch our 2nd Ramadan Special Video - & .

26/03/2022

Fasting in Ramadan and diabetes

Diabetes and fasting in Ramadan.

For more details visit Shaikh Specialist Clinic or WhatsApp "03160689901" for virtual appointment/check-up

25/03/2022

السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکات. 🌙
Please Note Kareem Clinic timings as follows
Morning: 11 A.M till 12.30 P.M (Mon - Fri)
Evening: 9.30 P.M till 11.P.M (Mon-Sat)
ازراہ کرم رمضان الکریم 1443 ہجری میں کلینک کے اوقات نوٹ فرمالیجئے
- صبح (پیر تا جمعہ) گیارہ 11 تا ساڑھے بارہ 12:30 بجے
- رات (پیر تا ہفتہ) ساڑھے نو 9:30 تا گیارہ 11 بجے.

24/02/2022

جب ہم مرتے ہیں تو اس وقت دماغ میں کیا ہوتا ہے یہ صدیوں سے ایک راز رہا ہے، لیکن ایک نئی تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ جب انسانی روح جسم سے پرواز کرتی ہے تو اس دوران گزری پوری زندگی چند سیکنڈز میں سمٹ کرآنکھوں کے سامنے روشن ہوجاتی ہے

Our lives really DO flash before us: Scientists record the brain activity of an 87-year-old man at the moment he died, revealing a rapid 'memory retrieval' process.What happens in the brain as we die has been a source of mystery for centuries, but a new study suggests our lives really do flash before our eyes in our final moments. This supports a theory known as 'life recall' – that we relive our entire life in the space of seconds like a flash of lightning just prior to death.

In fact, the brain may remain active and coordinated during and after the transition to death, and may even be programmed to 'orchestrate the whole ordeal', according to the researchers.

Photos from Shaikh Specialist Clinic's post 01/02/2022

PLEASE AVOID STRESS
AVOID SMOKING
CONTROL DIABETES AND HYPERTENSION.
FOLLOW S.O.Ps: WEAR FACE MASK ON CROWDED PLACES , WASH HANDS WITH SOAP AND WATER FOR 20-30 MINUTES AFTER TOUCHING POSSIBLE INFECTED SURFACES.
Rediscovering the Catharsis
آلام روزگار کو آساں بنا دیا
جو غم ہوا اسے غم جاناں بنا دیا ( اصغر گونڈوی)
ڈاکٹر جسٹن فائیلہ بچپن میں پینٹنگ کا شوق رکھتے تھے۔کووڈ کے وبائ دور میں انہیں اس بات کا شدت سے احساس ہوا کہ وہ اور ان کے آئ سی یو اور ہسپتال کے ساتھی شدید ذہنی اور جسمانی دباؤ کا شکار ہیں اورکچھ ساتھی اپنی جان بھی کھو بیٹھے ہیں سکون عبادت میں ہے اور اپنے عزیزوں کی بیماری پریشان بھی رکھتی ہے۔کلینک پر ماسک لگائیں۔مریض کے ساتھ صرف ایک تیماردار ڈاکٹر کے چیمبر میں داخل ہوں اور پچھلا میڈیکل ریکارڈ ساتھ لائیں۔باقی تیماردار ویٹنگ روم میں انتظار فرمائیں
اللہ تعالئ تمام مریضوں کو شفا عطا فرمائیں۔امین یا رب العالمین ۔
شکریہ

26/01/2022

اینٹی بائیوٹیکس کا موزوں استعمال کیا جائے، اپنے ڈاکٹر سے خود سے اینٹی بائیوٹیکس طلب نہ کریں،اینٹی بائیو ٹکس استعمال کرتے ہوئے ڈاکٹر سے مشورہ کریں۔اینٹی بائیوٹکس بیکٹریل انفیکشن کے لئے تو موثر ہے لیکن وائرل انفیکشن جیسا کہ سرد ی یا زکام کیلئے نہیں۔ وائرل انفیکشن میں اپنے ڈاکٹر سے مشورہ کریں۔پانی زیادہ پئیں اور آرام کریں۔

29/12/2021

Attention, please!
The clinic will be closed for two days on 30 and 31 December 2021.
Sorry for the inconvenience.

20/12/2021

Attention, please!

The clinic will be closed for two days on 30 and 31 December 2021.
Sorry for the inconvenience.

01/12/2021

rubella german measles - vaccine drive - Dr Ilyas Shaikh View's about it.

خسرہ اور روبیلا جان لیوا بیماری ہے، والدین اپنے بچوں کو ضرور ویکسینیٹ کروائیں
والدین کو چاہیے کہ وہ اپنے 9 مہینے سے 15 سال تک کے بچوں کو خسرہ اور روبیلا کا ٹیکہ ضرور لگوائیں، چاہے ماضی میں ان کے بچوں کو یہ ٹیکہ پہلے ہی کیوں نہ لگ چکا ہو۔
خسرہ ایک انتہائی تیزی سے پھیلنے والا مرض ہے اور وہ بچے جنہیں اس مرض کے خلاف حفاظتی ٹیکے نہ لگے ہوں ان میں شرح اموات کا امکان بہت زیادہ ہوتا ہے۔

پاکستان میں پچھلے سال کے مقابلے میں خسرہ کے چار گنا زیادہ کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جس کی وجہ سے حکام نے پاکستان میں دنیا کی سب سے بڑی حفاظتی ٹیکہ لگانے کی مہم شروع کی ہے جس کے دوران 12 دن میں پورے پاکستان میں 9 کروڑ سے زائد بچوں کو خسرے اور روبیلا سے بچاؤ کے ٹیکے لگائے جائیں گے۔rubella german measles

15/11/2021

خسرہ اور روبیلا جان لیوا بیماری ہے، والدین اپنے بچوں کو ضرور ویکسینیٹ کروائیں
والدین کو چاہیے کہ وہ اپنے 9 مہینے سے 15 سال تک کے بچوں کو خسرہ اور روبیلا کا ٹیکہ ضرور لگوائیں، چاہے ماضی میں ان کے بچوں کو یہ ٹیکہ پہلے ہی کیوں نہ لگ چکا ہو۔
خسرہ ایک انتہائی تیزی سے پھیلنے والا مرض ہے اور وہ بچے جنہیں اس مرض کے خلاف حفاظتی ٹیکے نہ لگے ہوں ان میں شرح اموات کا امکان بہت زیادہ ہوتا ہے۔

پاکستان میں پچھلے سال کے مقابلے میں خسرہ کے چار گنا زیادہ کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جس کی وجہ سے حکام نے پاکستان میں دنیا کی سب سے بڑی حفاظتی ٹیکہ لگانے کی مہم شروع کی ہے جس کے دوران 12 دن میں پورے پاکستان میں 9 کروڑ سے زائد بچوں کو خسرے اور روبیلا سے بچاؤ کے ٹیکے لگائے جائیں گے۔

Photos from Shaikh Specialist Clinic's post 05/11/2021

Photos from Shaikh Specialist Clinic's post

Photos from Shaikh Specialist Clinic's post 05/11/2021

Photos from Shaikh Specialist Clinic's post

Photos from Shaikh Specialist Clinic's post 05/11/2021

Photos from Shaikh Specialist Clinic's post

02/11/2021

Vitamin C (ie, ascorbic acid) is found in certain foods and is also available in over-the-counter (OTC) supplements. It is an antioxidant and reducing agent, that may help prevent some cancers, cardiovascular disease, and other conditions. A wide variety of health benefits have been ascribed to vitamin C, with different degrees of support.
Almost all fruits and vegetables contain some vitamin C. Citrus fruits are commonly known sources, but other foods with high vitamin C content include:

Bell peppers (especially red)

Broccoli

Brussels sprouts

Cantaloupe

Strawberries

Potatoes

Chili peppers

Cabbage

Although most people can obtain sufficient vitamin C from their diet, patients with certain conditions may benefit from supplements.

27/10/2021

The European Restart a Heart Day was founded with the support of the European parliament and takes place on the 16th of October every year. In 2021, let's focus on survivors with the hashtag .

08/10/2021

Over the years, careful monitoring of the Framingham Study population has led to the identification of the major CVD risk factors – high blood pressure, high blood cholesterol, smoking, obesity, diabetes, and physical inactivity – as well as a great deal of valuable information on the effects of related factors such as blood triglyceride and HDL cholesterol levels, age, gender, and psychosocial issues. Although the Framingham cohort is primarily Caucasian, the importance of the major CVD risk factors identified in this group have been shown in other studies to apply almost universally among racial and ethnic groups, even though the patterns of distribution may vary from group to group. Since its inception, the study has produced approximately 1,200 articles in leading medical journals. The concept of CVD risk factors has become an integral part of the modern medical curriculum and has led to the development of effective treatment and preventive strategies in clinical practice.

The Framingham Heart Study continues to make important scientific contributions by enhancing its research capabilities and capitalizing on its inherent resources. New diagnostic technologies, such as echocardiography (an ultrasound examination of the heart), carotid artery ultrasound, bone densitometry (for monitoring osteoporosis), and computerized tomography of the coronary arteries, are evaluated and integrated into ongoing protocols.

While pursuing the study’s established research goals, the National Heart, Lung, and Blood Institute and the Framingham investigators are expanding their research into other areas such as the role of genetic factors in CVD. Framingham investigators also collaborate with leading researchers from around the country and throughout the world on projects in stroke and dementia, osteoporosis and arthritis, nutrition, diabetes, eye diseases, hearing disorders, lung diseases, and genetic patterns of common diseases.

17/09/2021

دمے، ڈپریشن اورزیابیطس کی عام ادویہ اگرچہ اپنا اثر تو کرتی ہیں لیکن طویل مدتی اثر میں یہ آنتوں کے بیکٹریا (جرثوموں) میں جمع ہوتی رہتی ہیں اور آگے چل کر کئی ادویہ کے اثر کو کم کرسکتی ہیں یا کررہی ہیں۔ کیونکہ ادویہ جمع ہونے سے بیکٹیریا غیرمعمولی طور پر تبدیل ہورہے ہیں۔
اس معلومات سے ہم مختلف افراد پر دوا کے مختلف اثرات سمجھ سکتے ہیں اور ان کے منفی اثرات (سائیڈ افیکٹس) بھی سمجھ سکتےہیں۔ ہفت روزہ سائنسی جریدے نیچر میں شائع ہونے والی ایک رپورٹ کے مطابق بعض بیکٹیریا کیمیائی طور پر بعض ادویہ کو بدل سکتےہیں جسے بایوٹرانسفارمیشن کا عمل کہتے ہیں۔
جامعہ کیمرج اور یورپی مالیکیولر بائیلوجی تجربہ گاہ ( ای ایم بی ایل)، جرمنی کی کھوج بتاتی ہے کہ کئی عام ادویہ دھیرے دھیرے سے بیکٹیریا میں جاتی رہتی ہیں اور نہ صرف انہیں اندر سے بدلتی ہیں بلکہ ان کے افعال بھی بدل دیتی ہیں۔ اب خیال ہے کہ بیکٹیریا کے بدلنے سے براہِ راست نئی دواؤں پر اثر پڑسکتا ہےاور بالراست بھی بیکٹیریا کے افعال بدل سکتے ہیں جس سے دوا کے مضر اثرات بڑھ سکتے ہیں۔

ہمارے معدے، آنت اور نظامِ ہاضمہ میں سینکڑوں، ہزاروں اقسام کے بیکٹیریا پائے جاتے ہیں جو نہ صرف صحت بلکہ امراض میں بھی اہم کردار ادا کرتے ہیں۔ اس پورے مجموعے کو گٹ مائیکروبایوم کہا جاتا ہے۔ لوگوں میں اس کی ترتیب مختلف ہوتی ہے اور اب یہ حال ہے کہ ہم تندرست بیکٹریا کے گچھوں کی شناخت بھی کرچکے ہیں۔ ان کے بگڑنے سے موٹاپا، امنیاتی نظام اور دماغی امراض بھی پیدا ہوتے ہیں۔
سائنسدانوں نے اپنی تحقیق میں 25 عام بیکٹیریا شناخت کئے اور انہیں کھائی جانے والی 15 عام ادویات کا سامنا کرایا گیا۔ اس طرح کل 375 ادویہ اور بیکٹیریا کے ٹیسٹ کئے گئے۔ تحقیق میں 70 ملاپ ایسے تھے جن میں 29 کو اس سے قبل نہیں دیکھا گیا تھا۔
اس طرح بیکٹیریا اور ادویہ کے نئے 29 تعاملات میں سے 17 میں دوا بدلےکسی تبدیلی کے بغیر جمع ہونے لگیں۔ پھر ڈپریشن کی ایک دوا ڈیولوکزیٹائن نے تو بیکٹیریا کی کالونی ہی بدل دی اور ان کا توازن شدید بگڑ گیا۔ پھر ایک کیڑے پر ان کی آزمائش کی گئی اور اس کے بعد کیڑوں کا برتاؤ بھی بدل گیا۔
ماہرین کا خیال ہے کہ یہ تحقیق کا ایک نیا باب ہے جس پر مزید چھان بین کی ضرورت ہے۔

13/09/2021
12/09/2021
12/09/2021
11/09/2021
11/09/2021
11/09/2021
11/09/2021

Videos (show all)

Floods In Pakistan 2022 - Medical Support Message - Public Medical Service Message
Ramadan and chest diseases
Fasting in Ramadan and diabetes
rubella german measles - vaccine drive - Dr Ilyas Shaikh View's about it.
The European Restart a Heart Day was founded with the support of the European parliament and takes place on the 16th of ...
Over the years, careful monitoring of the Framingham Study population has led to the identification of the major CVD ris...
کورونا وائس کی ابتداکورونا کی علاماتکورونا وائرس کی تشخیص و علاجاور کورونا وائرس ویکسین پر ڈاکٹر محمد الیاس شیخ صاحب کی ...
Chest Infection
Pneumonia is swelling (inflammation) of the tissue in one or both lungs. It's usually caused by a bacterial infection. I...
ہمارے مُلک میں نفسیاتی مسائل بہت زیادہ ہیں۔ ڈپریشن (Depression)، اینکزائٹی(Anxiety)، سٹریس(Stress) ایسے نفسیاتی مسائل ہی...
تعارفماہر امراض سینہ و عمومی امراض ڈاکٹر محمد الیاس شیخ صاحب
On the day of Independence Day, Dr. Ilyas Sheikh, a chest specialist, had a useful discussion with Ahmar Jalil.

Location

Category

Telephone

Address


Shamsi Arcade, Shop No 6, Main Jamia Millia Road, Near Meezan Bank, Gulistan-e-R
Malir
75210

Opening Hours

Monday 19:00 - 21:15
Tuesday 19:00 - 21:15
Wednesday 19:00 - 21:15
Thursday 19:00 - 21:30
Friday 19:00 - 21:15
Saturday 19:00 - 21:30